انٹرنیٹ غائب ہو جائے گا، گوگل کے سربراہ نے حیران کن پیش گوئی کر دی

انٹرنیٹ غائب ہو جائے گا، گوگل کے سربراہ نے حیران کن پیش گوئی کر دی
انٹرنیٹ غائب ہو جائے گا، گوگل کے سربراہ نے حیران کن پیش گوئی کر دی

  

زیوریخ (نیوز ڈیسک) بظاہر تو یہ لگتا ہے کہ انٹرنیٹ برق رفتاری سے ساری دنیا میں پھیلتا جا رہا ہے لیکن ٹیکنالوجی کمپنی گوگل کے مشہور آئی ٹی گرو ایرک شمٹ نے مستقبل میں انٹرینٹ کے خاتمے کی پیش گوئی کر دی ہے۔

ایرک سوئٹزرلینڈ کے شہر ڈیووس میں ورلڈ اکنامک فورم کی ایک نشست سے خطاب کر رہے تھے۔ جب ان سے سوال کیا گیا کہ وہ انٹرنیٹ کا مستقبل کیسا دیکھتے ہیں تو ان کا کہنا تھا کہ آنے والے دور میں انٹرنیٹ، جیسا کہ ہم اسے جانتے ہیں، دنیا سے ختم ہو جائے گا۔ ان کا کہنا تھا کہ وہ وقت دور نہیں کہ جب آپ کی گاڑی، چشمہ، لباس، گھر کی اشیاءاور سٹرک کے کنارے لگی روشنیاں اور پارکوں میں لگے جھولے، یعنی ہر چیز انٹرنیٹ کا حصہ بن چکی ہو گی اور یہ ہماری زندگی کا اس طرح سے حصہ بن جائے گا کہ ہم اس کے علیحدہ وجود کو ہی بھول جائیں گے۔ یہ ہمارے لئے ہوا، پانی اور آکسیجن کی طرح ضروری ہو جائے گا۔ انہوں نے مزید وضاحت کرتے ہوئے بتایا کہ ہمارے گھر سے نکلتے ہی ہر چیز سے ہمارا رابطہ ڈیجیٹل آلات کے ذریعے ہو گا اور مختلف قسم کے سینسر ہمیں درجہ حرارت، موسم کی تبدیلی، ٹریفک کی صورتحال وغیرہ کی خبر دیں گے۔ اسی طرح گھر واپسی پر جب فریج، پنکھے اور ٹی وی جیسے آلات بھی ڈیجیٹل طریقے سے کنٹرول ہوں گے۔

یہ مکڑا جنسی عمل کے بعد خود کو نازک حصے سے محروم کیوں کردیتا ہے؟ سائنسدانوں نے معمہ حل کرلیا، حیرت انگیز انکشاف

اس موقع پر ووڈا فون کے سی ای او ویٹوریو کولاﺅ نے بھی ایرک سے اتفاق کرتے ہوئے کہا کہ مستقبل میں ننھے ڈرون ہمارے گرد یوں اڑ رہے ہوں گے جیسے مکھیاں بھنبھناتی پھرتی ہیں۔ اس کا ایک نتیجہ یہ بھی ہو گا کہ لوگوں کی پرائیویسی بالکل ختم ہو جائے گی اور حکومتیں اور دیگر ادارے ہر ایک کی ہر بات کی نگرانی کر رہے ہوں گے۔

مزید : ڈیلی بائیٹس