تعلیمی اداروں ،ہسپتالوں اور عبادت گاہوں کی سکیورٹی سخت کردی گئی

تعلیمی اداروں ،ہسپتالوں اور عبادت گاہوں کی سکیورٹی سخت کردی گئی

لا ہور (خبر نگار )وفاقی حکومت کی طرف سے مراسلہ ملنے کے بعد پنجاب حکومت نے محکمہ داخلہ کو تعلیمی اداروں کے ساتھ ساتھ ہسپتالوں اور عبادت گاہوں کی سکیورٹی یقینی بنانے کی ہدایات جاری کر دی ہیں ۔سکیورٹی ا مور پر بلائے جانیوالے اہم اجلاس میں وزیر قانون رانا ثناء اللہ،آئی جی پولیس مشتاق سکھیرا،سیکرٹری داخلہ اعظم سلیمان خان اور قانون نافذ کرنیوالے اداروں کے اعلیٰ حکام نے شرکت کی۔تفصیلات کے مطابق وفا قی وزارت دا خلہ نے پنجا ب میں د ہشت گردی کے خاتمے اور سکیورٹی کو یقینی بنانے کیلئے مراسلہ جاری کیا ہے کہ تمام تعلیمی اداروں،ہسپتالوں ،مساجد،امام بار گاہوں سمیت تمام عبادت گاہوں کی سکیورٹی یقینی بنائی جائے جس کے بعدوزیر اعلی ٰ پنجا ب نے وزارت دا خلہ پنجا ب ، آ ئی جی پنجا ب اور قانون نا فذ کر نے والو ں ادرو ں کے ساتھ اعلی ٰ سطحی اجلا س میں ہسپتا لو ں مساجد اورامام بارگاہوں سمیت دیگرعبادت گاہوں کی سکیورٹی سخت کرنے کی ہدایت کردی۔واضح رہے کہ با چا خا ن یو نیورسٹی میں د ہشت گردی کے بعد کا لعد م تحر یک طا لبا ن کی جا نب سے ویڈ یو لنگ میں پنجا ب میں دہشت گردو ں کی د ھمکی کے بعد وقافی وزارت دا خلہ نے مرا سلہ جا ر ی کیا ہے جس کے بعد وزیر اعلی ٰ پنجا ب محمد شہباز شریف کی زیرصدارت اعلیٰ سطح کا اجلاس ہوا، جس میں صوبائی وزیر قانون رانا ثناء اللہ، انسپکٹر جنرل پولیس مشتاق سکھیرا، سیکرٹری داخلہ میجر ریٹائرڈ اعظم سلیمان اور قانون نافذ کرنے والے اداروں کے اعلیٰ حکام نے شرکت کی۔وزیر اعلی نے صوبہ میں عوام کی جان ومال کی حفاظت کے لیے سکیورٹی سخت کرنے کی ہدایت کی۔ انہوں نے کہا کہ تعلیمی اداروں ، ہسپتا لو ں ، عبا دت گا ہو ں کے لیے واضح کردہ سکیورٹی پلان پر سختی سے عمل درآمد کی ہدا یت کی ۔ ذرا ئع کا کہنا ہے کہ با چا خا ن یو نیو رسٹی پر د ہشت گردو ں کے حملے کے بعد د ہشتگرود نے پنجا ب میں کے مختلف علاقوں جن میں لا ہور ، فیصل آ با د ، جھنگ ، بہا لپور ر ، ر حم یا ر خا ن ، میں د ہشت گرد تعلیمی ادار ں ہسپتا لو ں عبا د گاہو ں کو نشابنا سکتے ہیں۔

مزید : صفحہ اول