پارلیمنٹ زندہ انسانوں کا قبرستان بن کر رہ گئی، طاہر القادری

پارلیمنٹ زندہ انسانوں کا قبرستان بن کر رہ گئی، طاہر القادری

لاہور(نمائندہ خصوصی)پاکستان عوامی تحریک کے قائد ڈاکٹر طاہر القادری نے سنٹرل ایگزیکٹو کونسل کے اجلا س سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ ایمنسٹی بل کی منظوری سے معاشی دہشتگردی کو قانونی حیثیت دیدی گئی،حکمرانوں نے رشوت لاؤ ، مال بچاؤ اور لوٹ مچاؤ تحریک شروع کر دی، تخت لاہور ملک برباد کررہا ہے اور پارلیمنٹ زندہ انسانوں کا قبرستان بن کر رہ گئی،انہوں نے اپنے ٹیلیفونک خطاب میں پی آئی اے کو کمپنی بنانے کے بل کی منظوری کی شدید الفاظ میں مذمت کرتے ہوئے کہا کہ قومی ادارے ٹھیک کرنے کا نعرہ لگانے والوں نے قومی اداروں پر برائے فروخت کے اشتہار لگا دئیے۔انہوں نے کہا کہ پہلے نیب پلی بارگین سے کرپشن اور لوٹ مار کو پروموٹ کررہا تھا اب قومی اسمبلی نے کالے دھن کو سفید کرنے کا کالا قانون پاس کر دیا،معاشی دہشتگردی کا مسلح دہشتگردی سے گہرا تعلق ہے ، اگر معاشی دہشتگردی کو ختم نہ کیا گیا تو ڈر ہے آپریشن ضرب عضب کے ثمرات ضائع ہو جائیں گے کیونکہ معاشی دہشتگرد کالعدم تنظیموں کو لاجسٹک سپورٹ فراہم کررہے ہیں،ضرورت اس بات کی تھی کہ لوٹا گیا پیسہ واپس لیا جاتا اور معاشی دہشتگردوں کو چوراہوں پر لٹکایاجاتا مگر حکمران ان کیلئے ریلیف پیکیج لارہے ہیں۔

مزید : صفحہ آخر