مسلم ممالک میں تقسیم سے اوآئی سی کی ساکھ متاثر ہو رہی ہے،ساجد میر

مسلم ممالک میں تقسیم سے اوآئی سی کی ساکھ متاثر ہو رہی ہے،ساجد میر

لاہور( نمائندہ خصوصی ) امیر مرکزی جمعیت اہل حدیث پاکستان سینیٹر پروفیسر ساجد میر نے کہا ہے کہ مسلم ممالک میں تقسیم سے اوآئی سی کی ساکھ متاثر ہو رہی ہے۔جدہ میں او آئی سی کے اجلاس کے ا علامیہ کی حمایت کرتے ہیں۔اسلامی ممالک ایک دوسرے کی سلامتی اور خودمختاری کویقینی بنائیں، مداخلت اور جارحیت کسی طور بھی جائزنہیں۔ جامعہ ابراہیمیہ میں جمعہ کے اجتماع سے خطاب کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ بحرین، یمن، شام، صومالیہ کے داخلی معاملات میں ایرانی مداخلت اور دہشت گردوں کی حمایت قابل مذمت ہے۔ اسلامی کانفرنس تنظیم سعودی عرب اور ایران کے درمیان کشیدگی کے خاتمہ کے لیے کردار اداکرے۔ دہشت گردی کے خاتمے کیلئے ان کے درمیان باہمی اتحاد ضروری ہے۔ انتشار سے داعش جیسی تنظیمیں طاقت پکڑ رہی ہیں۔ انہوں نے کہا کہ سعودی عرب اور ایران میں تعلقات کی خرابی سے مسلم امہ کے اصل مسائل سے توجہ ہٹ رہی ہے۔ پروفیسر ساجد میر نے کہا کہ ایٹم بم کوئی کیک نہیں کہ اٹھا کر جسے چاہا دے دیا۔ اسرائیل کے نیوکلیئر پروگرام کی جانب سے امریکہ کی آنکھیں کیوں بند ہیں؟

مزید : ملتان صفحہ اول