سانحہ چارسدہ ،آئی ایس پی آر نے حملے کے دوران سہولت کار کی جانب سے رپورٹر کو کی گئی کال جاری کر دی

سانحہ چارسدہ ،آئی ایس پی آر نے حملے کے دوران سہولت کار کی جانب سے رپورٹر کو کی ...
سانحہ چارسدہ ،آئی ایس پی آر نے حملے کے دوران سہولت کار کی جانب سے رپورٹر کو کی گئی کال جاری کر دی

  


راولپنڈی (مانیٹرنگ ڈیسک)لیفٹینٹ جنرل عاصم باجوہ نے دوران پریس بریفنگ ایک فون کال ریکارڈنگ سنائی جوکہ حملے کے دوران کی گئی ، جو کہ حملہ آوروں کے سہولت کار نے ایک رپورٹر کو افغانستان کے موبائل نمبر 0093774021675 سے کی۔

تفصیلات کے مطابق اس فون کال میں دہشتگرد نے رپورٹر کو بتایا کہ یہ جو چارسدہ کی یونیورسٹی پر حملہ ہوا ہے یہ ان کے بندے ہیں جس پر رپورٹر نے کہا کہ یہ تو یونیورسٹی ہے اور یہ اے پی ایس والا معاملہ ہو گیا۔سہولت کار نے جواب دیا کہ یہ تو صحیح ہے لیکن یہ لوگ اسی نظام کا حصہ ہیں جو ہمیں در بدر کر رہے۔ رپورٹر نے دہشتگرد سے سوال کیا کہ یونیورسٹی میں کتنے بندے گئے ہیں تو جواب میں سہولت کار نے کہا کہ چار بندے ہیں اور ان سے رابطہ بحال ہے۔ تحریک طالبان کی جانب سے ذمہ داری قبول کرنے کی ویڈیو ابھی نشر کر دیں گے۔ رپورٹر نے دہشتگرد سے سوال کیا کہ حملہ کرنے والے بندے خودکش ہیں؟، دہشتگرد نے جواب دیا کہ یہ سب فدائی ہیں اور ان کے نام ہیں عمر، عثمان ، علی اور عابد۔ رپورٹر نے سوال کیا کہ 2 حملہ آوروں کے مرنے کی اطلاع ہے جس پر سہولت کار نے کہا کہ نہیں ا±نھیں اطلاع ہے کہ ایک مرا ہے اور تین کارروائی کر رہے ہیں۔

مزید : قومی /اہم خبریں