لاہور ہائی کورٹ میں زیرالتواءمقدمات کی تعداد ایک لاکھ 55ہزار سے تجاوز کرگئی

لاہور ہائی کورٹ میں زیرالتواءمقدمات کی تعداد ایک لاکھ 55ہزار سے تجاوز کرگئی
لاہور ہائی کورٹ میں زیرالتواءمقدمات کی تعداد ایک لاکھ 55ہزار سے تجاوز کرگئی

  


لاہور(نامہ نگار خصوصی )لاہورہائیکورٹ میں زیر التواءکیسز کی تعداد ایک لاکھ55 ہزار سے تجاوز کر گئی۔مقدمات کے بروقت فیصلے نہ ہونے کے باعث درخواست گزاروں کے ساتھ ساتھ وکلاءبھی پریشان ہیں۔ہائیکورٹ بار کے سیکرٹری بیرسٹراحمد قیوم کا کہنا ہے کہ عدالت عالیہ میں اتنی بڑی تعداد میں کیسز کا زیرالتوا ہونا لمحہ فکریہ ہے۔ اکتوبر2015ءمیں زیر التواءکیسز کی تعداد ایک لاکھ20 ہزار تھی جو اب بڑھ کر ایک لاکھ 55 ہزار سے بھی تجاوز کر چکی ہے۔ہائیکورٹ بار کے سیکرٹری بیرسٹراحمد قیوم نے کہا ہے کہ ہائیکورٹ کے ججز سائلین کو بروقت انصاف کی فراہمی کو یقینی بنانے کے لئے عدالتی اوقات کارسے بھی زیادہ عدالتوں میں کام کررہے ہیں اوروکلاءبھی مقدمات بروقت نمٹانے کے حوالے سے عدالتوں کے ساتھ بھرپورتعاون کررہے ہیں۔ گزشتہ ایک سال کے دوران ہائیکورٹ بار نے ہڑتالوں کے رحجان کی حوصلہ شکنی اوراہم ایشوز پر صرف تین ہڑتالیں کیں، بیرسٹراحمد قیوم کا کہناتھا کہ سائلین کو بروقت انصاف کی فراہمی کو یقینی بنانے کے لئے اہم اقدمات اٹھانے کے ساتھ ساتھ قانون سازی کرنا بھی وقت کی اہم ضرور ت ہے۔

مزید : لاہور