بسکٹ کی صنعت کے کاروباری حجم میں 20ارب روپے سالانہ کا اضافہ

بسکٹ کی صنعت کے کاروباری حجم میں 20ارب روپے سالانہ کا اضافہ

اسلام آباد (اے پی پی) گزشتہ 2 سال کے دوران پاکستان میں بسکٹ کی صنعت کے کاروباری حجم میں 20 ارب روپے سالانہ کا اضافہ ہوا ہے جبکہ آلو کے چپس وغیرہ کی تجارت کے حجم میں 5 ارب روپے سالانہ کا اضافہ ریکارڈ کیا گیا ہے۔ مقصود اسماعیل نے کہا ہے کہ سال 2014ء کے دوران بسکٹ کی ملکی صنعت کا سالانہ کاروباری حجم 40 ارب روپے تھا جو گزشتہ سال 2016 ء کے خاتمہ پر 60 ارب روپے سالانہ تک بڑھ گیا جبکہ آلو کے چپس وغیرہ کا کاروبار 15 ارب روپے سے 20 ارب روپے سالانہ تک بڑھ چکا ہے۔ انہوں نے کہا کہ بسکٹ، ٹافیوں اور چپس وغیرہ کی مجموعی قومی پیداوار کا تقریباً 65 فیصد حصہ شہری علاقوں میں جبکہ 35 فیصد دیہی علاقوں میں فروخت کیا جاتا ہے۔ انہوں نے کہا کہ بسکٹ اور آلو کے چپس کی صنعت میں ترقی کے وسیع امکانات مموجود ہیں اور یہی وجہ ہے کہ شعبہ سے منسلک تمام صنعتی ادارے اپنی پیداوار میں اضافہ کیلئے اقدامات کر رہے ہیں جبکہ کئی نئے سرمایہ کار بھی شعبہ میں سرمایہ کاری کر رہے ہیں، جس سے قومی پیداوار میں مزید اضافہ کے علاوہ روزگار کے نئے مواقع پیدا کرنے میں بھی مدد ملے گی۔

مزید : کامرس