پاراچنار میں داعشی دہشتگردوں کے خود کش حملے کیخلاف ملک گیر احتجاجی مظاہرے

پاراچنار میں داعشی دہشتگردوں کے خود کش حملے کیخلاف ملک گیر احتجاجی مظاہرے

لاہور( نمائندہ خصوصی )مجلس وحدت مسلمین پاکستان کے سربراہ علامہ راجہ ناصر عباس جعفری کی اپیل پر پاراچنار میں داعشی دہشت گردوں کے مظلوم عوام پر خود کش حملے کیخلاف ملک گیر احتجاجی مظاہرے ہوئے ، چاروں صوبوں سمیت گلگت بلتستان اور آزاد کشمیر میں مختلف اضلاع میں مظاہرے ہوئے ،لاہور میں پریس کلب کے سامنے مجلس وحدت مسلمین لاہور کے کارکنان نے بھر پور احتجاجی مظاہرہ کیا ، مظاہرے میں بڑی تعداد میں بزرگ ، بچے اور نوجوان شریک تھے ،مظاہرے میں سیکرٹری جنرل ایم ڈبلیو ایم پنجاب علامہ مبارک موسوی ،سیکرٹری سیاسیات سید حسن کاظمی ،سید اقبال شاہ سمیت دیگر رہنماوں نے شرکت کی ، مظاہرین سے خطاب کرتے ہوئے سیکرٹری جنرل ایم ڈبلیو ایم ضلع لاہور علامہ سید حسن رضا ہمدانی نے کہا کہ ریاست اس بات کا اعتراف کرے کہ داعش دہشت گرد پاکستان میں سر گرم ہو چکے ہیں ، پاراچنارکے مظلوم عوام کو حب الوطنی کی سزا دی جا رہی ہے ۔ نا اہل حکمرانوں نے بیلنس پالیسی کے نام پر نیشنل ایکشن پلان کو متنازعہ بنا کر دہشت گردوں اور ان کے سہولت کاروں کو منظم ہونے کا موقع دیا ، طالبان کیخلاف ہم نے سب سے پہلے آواز بلند کی کہ اس ناسور کے خلاف آ ہنی ہاتھوں سے نمٹے بغیر ملک میں امن کا قیام ممکن نہیں لیکن طالبان کے سیاسی سرپرستوں نے مذاکرات کے نام پر ان سفاک درندوں کے ہاتھوں مزید سینکڑوں پاکستانیوں کے قتل عام کا موقع دیا ہے آج ہم میڈیا کے با شعور محب وطن نمائندوں کو گواہ بنا کر اعلان کر رہے ہیں کہ داعش نے ملک میں اپنی سرگرمیاں شروع کر دی ہیں ۔پاراچنار کا واقعہ داعشی درندوں کا شاخسانہ ہے ۔علامہ حسن رضاہمدانی صاحب کا مزید کہنا تھا کہ اسلام آباد میں ایوان اقتدار کی ناک کے نیچے داعش کو پکارنے والوں کیخلاف حکمرانوں اور اداروں کی خاموشی ہر پاکستانی کے لئے لمحہ فکریہ ہے ۔ ملکی سلامتی اور بقا کو اگر مقدم رکھنا ہے تو اس سوچ کے حامل مٹھی بھر تکفیری گروہ اور ان کے سہولت کاروں کو بے نقاب کرنا ہوگا۔انہوں نے کہا کہ پاراچنار کے عوام کو دہشت گردوں کے رحم و کرم پر چھوڑنے والے دراصل اس المناک حادثے کے ذمہ دار ہیں کرم ایجنسی میں دہشت گردوں کیخلاف کاروائی کی بجائے عوام کو ہراساں کرنے کا عمل بند کیا جائے ۔مظاہرے میں سید حسن رضا ہمدانی ، رانا ماجد علی ، نجم الحسن ، نقی مہدی ، سید زین زیدی ، سجاد نقوی سمیت دیگر رہنماؤں نے خطاب کیا بعد ازاں پر امن طور پر مظاہرین منتشر ہوئے ۔

مزید : میٹروپولیٹن 1