میڈیسن تنظیموں نے ترمیم شدہ ڈرگ ایکٹ کیخلاف تحریک کیلئے کمیٹی تشکیل دیدی

میڈیسن تنظیموں نے ترمیم شدہ ڈرگ ایکٹ کیخلاف تحریک کیلئے کمیٹی تشکیل دیدی

لاہور(جنرل رپورٹر)میڈیسن تنظیموں نے ترمیم شدہ ڈرگ ایکٹ کیخلاف تحریک چلانے کے حوالے سے لائحہ عمل مرتب کرنے کیلئے ایکشن کمیٹی تشکیل دے دی۔ 18رکنی ایکشن کمیٹی کا چیئر مین پی پی ایم اے کے صدر حامد رضا کو مقرر کیا گیا ہے جبکہ کمیٹی کے کنوینیرپنجاب کیمسٹ کونسل کے صدر چودھری نثار ہوں گے۔ذرائع کے مطابق میڈیسن کی مختلف تنظیموں نے ترمیم شدہ ڈرگ ایکٹ کے خلاف تحریک کے حوالے سے لائحہ عمل مرتب کرنے کیلئے ایک گرینڈ کمیٹی تشکیل دے دی ہے جس میں لاہور ،ملتان ،گوجرانوالہ اور راولپنڈی سے ممبران کو شامل کیا گیا ہے ۔کمیٹی میں پاکستان فارماسیوٹیکل مینو فیکچرنگ ایسوسی ایشن سے محمد حمزہ ،محمد زبیر اور شاہ زیب شامل ہیں ۔پی پی ٹی ایم اے سے عرفان شاہد اور ڈاکٹر اصغر اشرف کو شامل کیا گیا ہے۔لاہور کی ڈسٹری بیوشن ایسوسی ایشن سے ڈاکٹر اسلم زیدی ،محمد خالد اور ڈاکٹر راحت علی کو شامل کیا گیا جبکہ چین فارمیسی ایسوسی ایشن سے محبوب احمد ،تیمور حسین ،عتیق گجر اور ارجمند فاروق شامل ہیں ۔ہومیو پیتھک ایسوسی ایشن سے ڈاکٹر عماد اللہ اور عمران مسعود شامل کئے گئے ۔ریٹیلرزز ایسوسی ایشن سے تنویر احمد باجوہ اور مولوی عبد الغفور کو شامل کیا گیا،لوہاری میڈیسن مارکیٹ سے کلیم شیخ اور شہزاد احمد کو بھی شامل کیا گیا ۔ایکشن کمیٹی بنانے کا فیصلہ گزشتہ روز لاہور میں ہونے والے تمام تنظیموں کے اجلاس میں کیا گیا ۔اجلاس میں خطاب کرتے ہوئے چوہدری نثار نے کہا کہ ترمیم شدہ ڈرگ ایکٹ کو ختم کیا جائے ۔کلینکس کے مالک محبوب احمد نے کہا کہ 1976کا ڈرگ ایکٹ ہمارے لئے اتنا ہی مقدم ہے جتنا کہ 1973ء کا ایکٹ،خدارا ڈرگ ایکٹ میں ترمیم کر کے لاکھوں لوگوں کو بے روزگارنہ کیا جائے۔

مزید : صفحہ آخر