گاڑیوں کی رجسٹریشن اور ریکارڈ کو سیف سٹی پروجیکٹ سے منسلک کرنے کا فیصلہ

گاڑیوں کی رجسٹریشن اور ریکارڈ کو سیف سٹی پروجیکٹ سے منسلک کرنے کا فیصلہ

لاہور(خبرنگار) صوبائی وزیر ایکسائز اینڈ ٹیکسیشن اور اطلاعات و ثقافت میاں مجتبیٰ شجاع الرحمن نے کہا ہے کہ حکومت نے گاڑیوں کی رجسٹریشن اور ریکارڈ کے نظام کو سیف سٹی پروجیکٹ سے براہ راست منسلک کرنے کا فیصلہ کیا ہے ۔ اس حوالے سے عالمی سطح پر معروف جدید ٹیکنالوجی سے استفادہ کیا جائے گا۔ یہ بات انہوں نے گزشتہ روز ایک اعلی سطحی اجلاس کی صدارت کرتے ہوئے کہی۔ اجلاس میں سیکرٹری ایکسائز اینڈ ٹیکسیشن احمد بلال صوفی ، ڈی جی ایکسائز اینڈ ٹیکسیشن اکرم اشرف گوندل کے علاوہ جرمنی کی ایک معروف فرم کے نمائندے بھی موجودتھے۔ صوبائی وزیر نے کہا کہ حکومت پنجاب نے اس بات کا تہیہ کیا ہوا ہے کہ جدید ٹیکنالوجی کے بھرپور استعمال کے ذریعے محکمانہ کارکردگی بہتر بنائی جائے۔ اس حوالے سے محکمہ ایکسائز نے جدید ٹیکنالوجی کو بروئے کار لاتے ہوئے گاڑیوں کے ریکارڈ کو سیف سٹی کے ڈیٹا بنک سے منسلک کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔ اس سسٹم کی بدولت گاڑی چوری کا خاتمہ ہوگا اور ٹریفک کی خلاف ورزی کی صورت میں ملزم کی فوری نشاندہی ممکن ہوگی۔ اسی طرح ٹریفک حادثات کی صورت میں ورثاء تک پہنچنے میں مدد ملے گی اور دہشت گردی سمیت دیگر جرائم کی موثر بیخ کنی ممکن ہوگی۔ انہوں نے کہا کہ یہ نظام لوگوں کو سہولت دے گا اور گاڑیوں کی خریدوفروخت میں فراڈ کا بھی خاتمہ ہوگا۔

مزید : صفحہ آخر