سی پیک منصوبوں اور چینی ورکرز کے تحفظ کیلئے خصوصی سیکیورٹی ڈویژن قائم، نوٹیفکیشن جاری

سی پیک منصوبوں اور چینی ورکرز کے تحفظ کیلئے خصوصی سیکیورٹی ڈویژن قائم، ...

اسلام آباد(اے این این) پاکستان نے پچپن ارب ڈالر مالیت کے چین پاکستان اقتصادی راہداری منصوبوں اور ان پر کام کرنے والے چینی ورکرز کے تحفظ کیلئے خصوصی سیکیورٹی ڈویژن قائم کیا ہے۔وزارت داخلہ نے اس سلسلے میں نوٹیفکیشن جاری کردیا ہے۔خصوصی سیکیورٹی ڈویژن کو چین پاکستان اقتصادی راہداری کے تحت مختلف منصوبوں اور ان منصوبوں پر کام کرنیوالے چینی کارکنوں کی حفاظت کی ذمہ داری سونپی گئی ہے۔ڈویژن فوج کی 9بٹالین اور13 ہزار 7 سو اہلکاروں کے ساتھ چھ سول ونگزپرمشتمل ہے۔منصوبہ بندی ڈویژن کے ایک عہدیدار کے مطابق صوبوں کی طرف سے اس سلسلے میں ضروری درخواستوں کی وصولی کے بعد وزارت داخلہ ان اہلکاروں کی تعیناتی کے احکامات جاری کرے گی۔چین پہلے ہی مشترکہ تعاون کمیٹی کے حال ہی میں بیجنگ میں ہونیوالے چھٹے اجلاس میں ان منصوبوں کے سیکیورٹی انتظامات پراطمینان کااظہار کرچکاہے۔خیال رہے گزشتہ برس ستمبر میں چوہدری نثار نے قومی اسمبلی کو آگاہ کیا تھا کہ سی پیک کی سیکورٹی کے لیے 21 ارب 57 کروڑ روپے کی لاگت سے خصوصی سیکورٹی ڈویژن قائم کی جا رہی ہے، جس میں سول آرمڈ فورسز کے 6 ونگ شامل ہیں۔انہوں نے ایوان کو تحریری جواب میں بتایا کہ نئے سیکورٹی ڈویژن میں پاک فوج اور سول آرمڈ فورسز کے 13ہزار 731اہلکاروں کو شامل کیا گیا ہے۔انھوں نے بتایا تھاکہ سیکورٹی ڈویژن میں فرنٹیئر کور ((ایف سی )خیبرپختونخوا کے 852، ایف سی بلوچستان کے 730 اہلکار، پنجاب رینجرز کے 2190 اور سندھ رینجرز کے 730 اہلکار جبکہ پاک فوج کے 9 ہزار 229 اہلکار شامل ہونگے ۔

سکیورٹی ڈویژن

مزید : صفحہ آخر