پنجاب بھر کا سیوریج درست کرنے کیلئے 30 ارب روپے مختص کردیئے ،ہارون سلطان

پنجاب بھر کا سیوریج درست کرنے کیلئے 30 ارب روپے مختص کردیئے ،ہارون سلطان

ملتان (نمائندہ خصوصی)160وزیر ہاؤسنگ ہارون سلطان بخاری نے کہا ہے کہ علیحدہ صوبہ کا نعرہ لگا کر سیاستدانوں نے خود کو سیاسی طور پر کیش کروایا ہے، وزیراعلیٰ جنوبی پنجاب خصوصاً ملتان کے مسائل حل کرنے میں سنجیدہ ہیں160، پنجاب بھر کے سیوریج کو درست کرنے کیلئے30ارب روپے مختص کردیئے گئے ہیں160، پہلے فیز کا آغاز ملتان سے ہوگا ان خیالات کا اظہار انہوں160نے گذشتہ روز صحافیوں سے گفتگو کرتے ہوئے کیا۔ انہوں160نے مزید کہا ہے کہ وزیراعلیٰ پنجاب میاں160شہباز شریف جنوبی پنجاب کے(بقیہ نمبر25صفحہ12پر )

مسائل سے آگاہ ہیں160اور ان کو حل کرنے میں160سنجیدہ اقدامات کر رہے ہیں اور مجھے اس لئے وزیر بنایاگیا ہے کہ جنوبی پنجاب کی محرومیوں کا خاتمہ کیا جاسکے۔ انہوں160نے کہا ہے کہ ملتان ساڑھے پانچ ہزار سال کی سولائزیشن کی حفاظت کیلئے ہر ممکن اقدامات کئے جارہے ہیں160۔ اپر پنجاب اور جنوبی پنجاب کو برابر فنڈز دیئے جارہے ہیں160انہوں نے کہا ہے کہ جنوبی پنجاب کو علیحدہ صوبہ بننا چاہیے لیکن صحیح وقت کا انتخاب لازمی ہے۔ ایک سوال کے جواب میں انہوں160نے کہا ہے کہ اگر جنوبی پنجاب علیحدہ صوبہ ہوتا تو میں160چیف منسٹر بننے کے بجائے سیاست کو چھوڑنے پر ترجیح دیتا، یہاں بہت بڑے بڑے لوگ موجود ہیں۔ جنوبی پنجاب کو علیحدہ صوبہ بنانے کیلئے ابھی یہاں160ایجوکیشن اور کوالٹیز نہیں160ہیں160۔ ان کے دورہ ملتان کے موقع پر واسا حکام نے مختلف پراجیکٹ کے حوالے سے بریفینگ دی۔دریں اثنائصوبائی وزیر ہاؤسنگ اربن پلاننگ اینڈ پبلک ہیلتھ انجینئرنگ ہارون احمد سلطان بخاری نے کہا ہے کہ پنجاب حکومت صوبہ بھر میں شہریوں کو پینے کے صاف پانی کی فراہمی ،سیوریج سمیت دیگر بنیادی سہولیات کے منصوبوں پر دل کھول کر وسائل فراہم کر رہی ہے وزیر اعلی پنجاب میاں شہباز شریف ملتان میٹرو بس منصوبے کے افتتاح کے موقع پر ملتان شہر کے سیوریج سمیت دیگر میگا پر اجیکٹ کے حوالے سے شاندار پیکج کا اعلان کرینگے انہوں نے کہا کہ وزیر اعلی پنجاب نے ساؤتھ پنجاب کی تعمیر و ترقی کا ٹاسک دے کر مجھے خصوصی طور پر ہاؤسنگ منسٹری کا قلمندان سونپا ہے انہوں نے کہا ہے کہ ملتان سمیت صوبہ کے تمام واسا کے بنیادی ذمہ داری فراہمی و نکاسی آب ہے جہاں یہ محکمے ذمہ داری کے ساتھ یہ کام انجام دیں گے انہیں دنیاوی زندگی کے ساتھ ساتھ آخرت میں بھی اس کا اجر ملے گا اور کسی نمازی کے سیوریج کے پانی سے کپڑے خراب ہوئے تو اس غفلت اور گناہ کے ذمہ دار بھی ہم ہی ٹہرائے جائیں گے انہوں نے تجویز دی کہ واسا ملتان اپنے سیوریج کے تمام منصوبوں میں آر سی سی پائپ کی بجائے زیادہ مدت والے ایچ ڈی پی ایف (HDPF) پائپ کا استعمال کر ے اور اس بارے فزیبلٹی رپورٹ تیار کی جائے تاکہ ایسا کام کر جائیں کہ آئندہ آنے والی نسلیں بھی ہمیں دعائیں دیتی رہیں ان خیالات کا اظہار انہوں نے وزیر اعلی پنجاب کی ہدایت پر واسا ملتان سے لی جانے والی بریفنگ کے موقع پر کیا ایڈیشنل ڈی جی ایم ڈی اے الطاف حسین ساریو ، منیجنگ ڈائریکٹر واسا راؤ محمد قاسم ، ڈپٹی منیجنگ ڈائریکٹر ڈائریکٹر فنانس واسا ملک نعیم کھوکھر ،ریذیڈنٹ انجینئر نیسپاک چوہدری منظور احمد سمیت واسا کے تما م ڈپٹی ڈائریکٹرز اور نیسپاک کے انجینئر بھی موجود تھے منیجنگ ڈائریکٹر واسا راؤ محمد قاسم نے صوبائی وزیر کو بریفنگ دیتے ہوئے بتایا کہ سابق پرائم منسٹر دور کی ( 13) سکیموں کے حوالے سے فنڈز مل گئے ہیں اور جو کنٹریکٹر ز کا م چھوڑ چکے تھے ان سے دوبارہ ان سکیموں پر کام شروع کرا دیا گیاہے اور انشااﷲ آئندہ (6) ماہ میں یہ منصوبے مکمل ہونے سے واسا ملتان کے بیشتر مسائل حل ہوجائیں گے انہوں نے بتایا کہ شہر میں پرانی اور بوسیدہ لائنوں پر بھی کام جاری ہے سورج میانی سے ایم ڈی اے چوک تک (72 ) انچ کی نئی سیوریج لائن بچھانے کا کام مکمل ہو چکا ہے جبکہ شہر بھر میں پرانی لائنوں کیوجہ سے کراؤن فیلئر کے واقعات بڑھ چکے ہیں اور ان لائنوں کی تبدیلی کے لیے واسا کو ساڑھے (3) ارب روپے کے فنڈز درکار ہیں جبکہ چونگی نمبر ( 9) ڈسپوزل اسٹیشن کی شفٹنگ ، سدرن سلیج کئیرئیر، واٹر ٹریٹمنٹ پلانٹ اور مشینری کے لیے بھی ( 25) ارب روپے سے زائد فنڈز کی ضرورت ہے جبکہ واسا کو درپیش مالی مشکلات اور بجلی کی مد میں میپکو کو (16) کروڑ روپے کی ادائیگی کے سلسلے میں بھی پنجاب حکومت کو سبسڈی گرانٹ سالانہ (760) ملین روپے کر نے کی بھی استدعا کی گئی ہے انہوں نے بتایا کہ واسا کی سالانہ آمدن کا حجم (971) ملین جبکہ اخراجات کا حجم (1368) ملین پر مشتمل ہے اور سالانہ (394) ملین روپے کے خسارے کا سامنا ہے جبکہ نیسپاک کی طرف سے واسا ملتان کے آئندہ (25) سالوں کی ماسٹر پلاننگ کے منصوبے کے حوالے سے بتایا گیا کہ شہر بھر کی فراہمی و نکاسی آب کی ضرورتوں کو مدنظر رکھتے ہوئے سسٹم کی پلاننگ کی جارہی ہے اور ملک بھر میں ملتان واحد شہر ہے جس کا سیوریج اور واٹر سپلائی سسٹم میپ ہوچکا ہے اور اپریل تک ماسٹر پلاننگ کا منصوبہ مکمل کر لیا جائے گا جس پر صوبائی وزیر ہاؤسنگ سید ہارون احمد سلطان بخاری نے واسا ملتان کو فنڈز سمیت و دیگر ایشو ترجیح بنیادوں پر حل کراونے کی یقین دھانی کراوئی۔

مزید : ملتان صفحہ آخر