صوبہ سرائیکستان کے قیام تک احتجاج جاری رکھیں گے‘ ظہور دھریجہ

صوبہ سرائیکستان کے قیام تک احتجاج جاری رکھیں گے‘ ظہور دھریجہ

ملتان(جنرل رپورٹر)سرائیکی وسیب کو دیوار سے لگانے کی پالیسی ترک کی جائے ۔ صوبہ سرائیکستان کے قیام تک احتجاج جاری رہے گا۔ ان خیالات کا اظہار سرائیکی رہنماؤں ظہور دھریجہ، علامہ اقبال وسیم، مسیح اللہ خان جامپوری ، حاجی عبدالمالک کھوکھر نے پریس کانفرنس سے خطاب کرتے (بقیہ نمبر60صفحہ12پر )

ہوئے کیا ۔اس موقع پر جام ایم ڈی بھی موجود تھے ۔ انہوں نے کہا کہ وزیراعظم ملتان آ رہے ہیں ، اس موقع پر صوبہ کمیشن اور ملتان میٹرو فیز ٹو کے ساتھ بہاولپور ، ڈی جی خان، جھنگ ، میانوالی اور ڈی آئی خان کے لئے میٹرو اور میگا پراجیکٹس کا اعلان کیا جائے انہوں نے کہا کہ سرائیکی وسیب میں اناج کے گودام بھرے ہیں مگر پیٹ خالی ہیں وزیراعظم نے ملک میں110 ارب روپے کے 39 جدید ہسپتال بنانے کا اعلان کیا ہے مگر تاحال سرائیکی وسیب کے حصے میں ایک بھی ہسپتال نہیں آیا ۔ انہوں نے کہا کہ وسیب کو ان ہسپتالوں میں سے آبادی کے مطابق حصہ ملنا چاہئے سی ایس ایس میں سندھ اربن اور سندھ رورل کی طرح الگ کوٹہ ہونا چاہئے اور سی ایس ایس میں پنجابی ، سندھی ، پشتو اور بلوچی مضمون کی طرح سرائیکی مضمون بھی شامل ہونا چاہئے کہ اب سرائیکی میٹرک سے شروع ہو کر پی ایچ ڈی تک پڑھائی جا رہی ہے ، ملتان ، میانوالی ، بلکسر موٹر وے براستہ مظفر گڑھ ، بھکر ، ڈی آئی خان کو سی پیک منصوبے کا حصہ بنایا جائے اور سی پیک منصوبے کے تحت انڈس ہائی وے کو آٹھ رویہ بنایا جائے۔

مزید : ملتان صفحہ آخر