ہائی کورٹ:ٹیکسٹائل ملز سے آرایل این جی کی اضافی لاگت کے خلاف حکم امتناعی جاری

ہائی کورٹ:ٹیکسٹائل ملز سے آرایل این جی کی اضافی لاگت کے خلاف حکم امتناعی جاری
ہائی کورٹ:ٹیکسٹائل ملز سے آرایل این جی کی اضافی لاگت کے خلاف حکم امتناعی جاری

  

لاہور (نامہ نگار خصوصی )لاہور ہائیکورٹ نے پنجاب کی ٹیکسٹائل ملز پر آر ایل این جی کی اضافی لاگت کے خلاف درخواست پر حکم امتناعی جاری کرتے ہوئے حکومت کو اضافی لاگت کی وصولی سے روک دیا ہے ۔

پاکستان افغانستان میں امن کے قیام کیلیے کردار ادا کرتا رہے گا:سرتاج عزیز

عدالت نے درخواست باقاعدہ سماعت کے لئے منظور کرتے ہوئے وزارت پٹرولیم و قدرتی وسائل اور محکمہ سوئی گیس سے 3 ہفتوں میں جواب بھی طلب کر لیاہے۔جسٹس عائشہ اے ملک نے کالونی ٹیکسٹائل سمیت 37 ملز مالکان کی درخواستوں پر سماعت کی، ٹیکسٹائل ملز مالکان کی طرف سے میاں محمود الرشید ایڈووکیٹ نے پیش ہو کر موقف اختیار کیا کہ حکومت نے پنجاب کی ٹیکسٹائل ملز پر آر ایل این جی کی اضافی لاگت نافذ کر دی ہے، حالانکہ ملز مالکان پہلے ہی آر ایل این جی گیس کی لاگت ادا کر رہے ہیں، درخواست گزاروں کا مزید کہنا تھا کہ یو ایف جی چارجز سمیت اضافی لاگت ٹیکسٹائل انڈسٹری کے خلاف سازش کے مترادف ہے اور آر ایل این جی پر پاکستان اور قطری حکومت کا معاہدہ بھی سامنے نہیں آیا، انھوں نے اپنے دلائل میں مزید کہا کہ حکومت کی یہ پالیسی ہے کہ یہ گیس صرف پنجاب کی ٹیکسٹائل ملز استعمال کروں گی جبکہ ٹیکسٹائل ملز پر آر ایل این جی کی اضافی لاگت امتیازی سلوک ہے، انھوں نے استدعا کی کہ ٹیکسٹائل ملز پر یو ایف جی چارجز سمیت آر ایل این جی کی اضافی لاگت کالعدم کی جائے اور ٹیکسٹائل ملز سے وصول کردہ اضافی لاگت واپس کرنے کا حکم دیا جائے۔

مزید : لاہور