ہاکی ورلڈ الیون سے میچز میں سٹیڈیمز خالی،غیر ملکی کھلاڑی بھی حیران

ہاکی ورلڈ الیون سے میچز میں سٹیڈیمز خالی،غیر ملکی کھلاڑی بھی حیران

لاہور(آئی این پی) پاکستان ہاکی فیڈریشن (پی ایچ ایف) کی ناقص منصوبہ بندی کے باعث ہاکی ورلڈ الیون کے دورہ پاکستان میں 2میچز میں سٹیڈیم خالی رہے۔غیر ملکی کھلاڑی بھی سٹیڈیم خالی دیکھ کر حیران ، پاکستان کا دورہ کرنے والی ہاکی ورلڈ الیون کا حصہ ہاکی کے عالمی شہرت یافتہ کھلاڑی پال لٹجنز کا کہنا ہے کہ ماضی میں پاکستان میں جب کھیلتے تھے تو سٹیڈیم شائقین سے بھرے ہوتے تھے مگر اب خالی تھے، پاکستان ہاکی فیڈریشن کو پاکستانی ہاکی کا کھویا ہوا مقام دوبارہ حاصل کرنے کے لیے سخت محنت کرنی ہوگی اور عصرحاضر کے تقاضوں سے خود کو ہم آہنگ کرنا ہوگا۔ہالینڈ سے تعلق رکھنے والے پال لٹجنز ورلڈ الیون کے ساتھ پاکستان کے مختصر دورے پر آئے تھے۔ پال لٹجنز نے کہا کہ پاکستان دوبارہ آکر بہت خوشی ہوئی ،یہ کل کی بات معلوم ہوتی ہے کہ 1981 میں ہالینڈ کی ٹیم نے کراچی میں تیسری چیمپئنز ٹرافی جیتی تھی ۔ انہیں یاد ہے کہ کراچی کا ہاکی کلب آف پاکستان سٹیڈیم شائقین سے کھچا کھچ بھرا ہوا تھا لیکن اس بار جب وہ پاکستان آئے ہیں تو کراچی اور لاہور کے اسٹیڈیمز شائقین سے بھرے ہوئے نہیں ۔

۔پال لٹجنز کا کہنا ہے کہ پاکستان میں بین الاقوامی ہاکی دوبارہ شروع کرنے کے لیے پاکستان ہاکی فیڈریشن کو بہت کچھ کرنے کی ضرورت ہے، سب سے اہم بات غیرملکی کھلاڑیوں کی حفاظت کی یقین دہانی ہے،اگر پاکستان ہاکی فیڈریشن اس میں کامیاب ہوجاتی ہے تو غیرملکی کھلاڑی پاکستان ضرور آئیں گے۔

مزید : کھیل اور کھلاڑی