گھریلو تنازع پر بھائی، بھابی قتل، سفاک شخص نے بیوی اور نانی ذبح کر دی

گھریلو تنازع پر بھائی، بھابی قتل، سفاک شخص نے بیوی اور نانی ذبح کر دی

چشتیاں، یزمان(نمائندگان) گھریلو تنازع پر دو حقیقی بھائیوں نے بھائی اور (بقیہ نمبر40صفحہ12پر )

بھابی کو موت کے گھاٹ اتار دیا ، سفاک شخص نے بیوی اور نانی کو ذبح کر دیا چشتیاں سے نمائندہ پاکستان کیمطابق محلہ حافظ آباد شوگر ملز روڈ کے رہائشی ملزم عدنان نے علی الصبح اپنے گھر میں سوئی ہوئی ضعیف العمر اپنی نانی صفیہ بی بی اور اپنی بیوی رضوانہ کو تیز دھار آلے سے قتل کر دیا اور فرار ہو گیا ۔ تھانہ سٹی پولیس نے دہرے قتل کی لرزہ خیز واردات کی اطلاع ملنے پر موقع پر پہنچ کر نعشوں کو قبضہ میں لے کر تحصیل ہیڈ کوارٹر ہسپتا ل پہنچا دیا اور ملزم کی گرفتاری کے لیے چھاپے مارنے شروع کر دیے پولیس کے مطابق دوہرے قتل کے اصل محرکات ملزم کی گرفتاری ، پوسٹمارٹم رپورٹ اور تفتیش کے بعد سامنے آئیں گے ۔ پولیس نے پوسٹمارٹم کے بعد نعشیں ورثاء کے حوالے کر کے کاروائی شروع کر دی ہے ۔ مقتولہ رضوانہ ایک بچے کی ماں تھی ۔ یزمان سے نمائندہ خصوصی کیمطابق یزمان کے نو احی چک 112 ڈی بی کالونی کے رہا ئشی عبدالستار ،عبدالغفا ر قوم گجر پسران سکندر نے اپنے ساتھی محمد یا سین کے ہمراہ گھریلو ناچاقی کے با عث اپنے حقیقی بھا ئی ارشاد احمد کے گھر گھس کر اسے اور اسکی بیوی شمیم بی بی کو کسیوں اور ڈنڈو کے وار کر کے قتل کر دیا اور مو قع سے فرا ر ہو گئے اطلاع ملنے پر مقا می ڈی ایس پی فر خ جا وید بھا ری نفری کے ہمراہ مو قع پرپہنچ گئے اور نعشیں اپنے قبضہ میں لیکرپوسٹمارٹم کے لیئے تحصیل ہیڈ کوا ٹر ہسپتا ل یزمان پہنچادیں پو لیس تھا نہ صدر یزمان نے شمیم بی بی کے بھا ئی مختیا راحمد کی در خواست پر ملزمان کے خلاف کا روائی شروع کر دی ۔

عبدالحکیم، خانیوال، سرائے سدھو (نمائندگان) موٹرسائیکلون کے تصادم میں (بقیہ نمبر41صفحہ12پر )

نوجوان جاں بحق نشے کا عادی نوجوان زندگی کی بازی ہار گیا عبدالحکیم ، خانیوال سے نامہ نگار، سٹی رپورٹر، نمائندہ پاکستان کیمطابق عبدالحکیم کے محلہ مجاہد آ باد کے رہائشی محمد عاشق کا25سالہ بیٹا محمد آ صف اپنے دوست محمد شہزاد کے ہمراہ اپنے موٹر سائیکل پر غوثیہ چوک کی طرف آ رہا تھا کہ اچانک سامنے سے آ نے والے موٹر سائیکل سے ٹکراگیا سر میں شدید چوٹ لگانے سے محمد آ صف موقع پر ہی دم ٹوڑ گیا جبکہ اس کا دوست شہزاد اور دوسرا موٹر سائیکل سوار شدید زخمی ہو گئے ۔ سرائے سدھو سے نمائندہ خصوصی کیمطابق ایک اور نوجوان نشے کے ہاتھوں موت کی وادی میں پہنچ گیا،لاش مرکز صحت میں ایس ایچ او کی رہائش گاہ کے سامنے ملی،تفصیلات کے مطابق سرائے سدھو جوکہ ایک طویل عرصہ سے نشہ بیچنے والوں کے لئے جنت بنا ہوا ہے پولیس ان کے سامنے بے بس ہے اور کاغذی چھاپوں سے آگے نہیں بڑھ پاتی اس کے نتیجہ میں ایک اور نوجوان گذشتہ سے پیوستہ رات نشہ کرتے ہوئے اشرف زندگی کی بازی ہار گیانوجوان رات بھر گھر سے غائب رہا اور دیہی مرکز صحت میں ایس ایچ او کی رہائش گاہ کے سامنے نشہ کرتا رہا جس میں انجیکشن بھی شامل تھا نشہ کی زیادتی یا نشہ آور انجیکشن کی زیادتی کے باعث موت کے منہ میں چلا گیا الصبح وہ وہاں پر مردہ حالت میں پایا گیا اطلاع ملنے پر پولیس تھانہ سرائے سدھو نے موقع پر پہنچ کر لاش قبضہ میں لے لی اور ضروری کارروائی کے بعد ورثہ کے حوالے کردی ۔

مزید : ملتان صفحہ آخر