ناقص اور غیر معیاری اشیاء،یو ٹیلیٹی سٹوروں سے صارفین نے منہ مو ڑ لیا

ناقص اور غیر معیاری اشیاء،یو ٹیلیٹی سٹوروں سے صارفین نے منہ مو ڑ لیا

لاہور (اسد اقبال)وفاقی حکومت کے زیر اثر صو بائی دارالحکومت سمیت ملک بھر میں چلنے والے ہزاروںیو ٹیلیٹی سٹوروں سے صارفین کی بڑی تعداد نے منہ مو ڑ لیا ہے ۔جس کی وجہ اشیائے صرف ناقص اور غیر معیاری ہو نے کے ساتھ ساتھ گزشتہ ماہ سے یوٹیلیٹی گھی و آئل اور چینی کی عدم دستیابی ہے جس سے لاہور کے یوٹیلیٹی سٹوروں کی مجمو عی کارکر دگی پر بھی منفی اثر پڑ رہا ہے اور پوش علاقوں سمیت بڑے بڑے یو ٹیلیٹی سٹوروں کی روزانہ سیل بھی تیز ی سے نیچے آ رہی ہے ۔ ذرائع کا کہنا ہے کہ یو ٹیلیٹی سٹور کارپوریشن اوپن مارکیٹ میں روزانہ کی بنیاد پر اشیائے خوردو نوش کی قیمتو ں میں ہو نے والی کمی پر چشم پو شی اختیار کیے ہوئے مہینوں یو ٹیلیٹی اشیاء کی قیمتوں کا چارٹ تبدیل نہ کر تی ہے جس کے پیش نظر اوپن مارکیٹ میں تو کئی ایک دالوں کی قیمتیں بڑھنے کے بعد نیچے آچکی ہیں جبکہ یو ٹیلیٹی سٹوروں پر ابھی بھی قیمتیں کم نہ کی گئیں ہیں جن میں دال ماش ، دال مسور ،دال مونگ اور مصالحہ جات شامل ہیں ۔روزنامہ پاکستان کی جانب سے گزشتہ روز صو بائی دارالحکومت کے مختلف علاقوں میں واقع کئی یو ٹیلیٹی سٹوروں کا سروے کیا گیا جہاں پر صارفین کی تعداد نہ ہونے کے برابر جبکہ شادمان ، گڑھی شاہو ، ریلوے روڈ اور مصری شاہ کے یو ٹیلیٹی سٹوروں پر ہو کا عالم دکھائی دیا جبکہ انتظامیہ صارفین کی راہ تکتے دکھائی دیے ۔ذرائع کا کہنا ہے کہ یو ٹیلیٹی سٹوروں پر کئی ایک اشیاء کی قیمتیں عام مارکیٹ کے تناسب سے کم ہیں جبکہ سستی چینی ، گھی و آئیل کئی ماہ سے آ ہی نہیں رہا۔دوسری جانب اوپن مارکیٹ میں ملٹی نیشنل سٹورز پر کسٹمرز کو سہولیات سمیت اشیاء کی کوالٹی کے معیار میں تسلی ہو نے کے پیش نظر صارفین کثیر تعداد میں بڑے سٹوروں کا رخ کر رہے ہیں جہاں پر ضروریات زندگی اور کچن کی تمام آئٹمز باآسانی میسر ہوتی ہیں ۔یوٹیلیٹی سٹورز پر خریداری کر نے آئے ہوئے صارفین و شہریوں مسز عارف محبو ب ، محمد طارق ، نو شاد ، رحمت علی ، فر قان ، خالد ، عمران ، وقار اور سفینہ ناصر نے پاکستان سے گفتگو کر تے ہوئے کہا کہ حکومت نے یو ٹیلیٹی سٹوروں کا قیام غریب سمیت ہر طبقہ کو اوپن مارکیٹ کی نسبت سستی اشیاء کی فراہمی کے لیے قائم کیے تھے تاہم حکومتی عدم تو جہی کے باعث آج سستے یو ٹیلیٹی سٹور مہنگے سٹوروں کا روپ دھار چکے ہیں جہاں پر ریلیف نام کی کو ئی چیز نہیں جبکہ اشیاء کی کوالٹی بھی غیر معیاری ہے ۔ خصو صا اجنا س اور مصالحہ جات ایسے لگتے ہیں جیسے کئی سالوں سے پیک کیے ہوں ۔

یوٹیلٹی سٹور

مزید : صفحہ آخر