کورم پورا نہ ہوسکا ،حکومت قومی اسمبلی اجلاس کے انعقاد میں ناکام

کورم پورا نہ ہوسکا ،حکومت قومی اسمبلی اجلاس کے انعقاد میں ناکام

اسلام آباد (صباح نیوز) حکومت پیر کو قومی اسمبلی کے اجلاس کے انعقاد میں ناکام ہو گئی سوا گھنٹہ تک کاروائی معطل رہنے کے بعد اجلاس منگل تک ملتوی کرایا گیا کورم کی نشاندہی کے معاملے پر سپیکر قومی اسمبلی سردار ایاز صادق کی تحریک انصاف کی رہنما ڈاکٹر شیریں مزاری سے تلخ کلامی بھی ہو گئی اور کورم کی عدم موجودگی کی نشاندہی پر غُصہ پر کاروائی کو روک دیا سوا چار بجے سپیکر سردارایاز صادق کی صدارت میں قومی اسمبلی کا اجلاس شروع ہوا تو انہوں نے وقفہ سوالات شروع کیا تو تحریک انصاف کے ارکان کورم کی نشاندہی کے لیے فلور مانگنے گئے سپیکر نے سختی سے کہا کہ وقفہ سوالات کے بعد نکتہ اعتراض پر فلور دیا جائے گا جس پر تحریک انصاف کے ارکان نے احتجاج شروع کر دیا ڈاکٹر شیریں مزاری نے شور شرابا شروع کر دیا سپیکر نے کہا کہ وقفہ سوالات کے بعد کورم کی نشاندہی کر دیں ایسا تحریک انصاف نے تسلیم کرنے سے انکار کر دیا ڈاکٹر شیریں مزاری کو سپیکر کو فلور دینا پڑا کورم کی نشاندہی کے وقت ایوان میں صرف 30ارکان تھے کاروائی کو کورم پورا ہونے تک ملتوی کر دیا سوا گھنٹہ کے بعد ڈپٹی سپیکر مرتضٰی جاوید عباسی آئے 30سے کچھ زائد ارکان تھے انہوں نے کورم نہ ہونے پر کاروائی کو آج منگل کی صبح ساڑھے دس بجے تک ملتوی کردیا۔

قومی اسمبلی

مزید : کراچی صفحہ اول