آصف ہاشمی کی کی 15 دن کا وقت دینے کی استدعا مسترد،آئندہ سماعت پر پیش ہونے کا حکم

آصف ہاشمی کی کی 15 دن کا وقت دینے کی استدعا مسترد،آئندہ سماعت پر پیش ہونے کا ...
آصف ہاشمی کی کی 15 دن کا وقت دینے کی استدعا مسترد،آئندہ سماعت پر پیش ہونے کا حکم

  

اسلام آباد(ڈیلی پاکستان آن لائن)محکمہ اوقاف کی پراپرٹی سے متعلق ازخود نوٹس کیس کی سماعت کے دوران سپریم کورٹ نے آصف ہاشمی کی 15دن کا وقت دینے کی استدعا مستردکردی اور انہیں آئندہ (پیر) کو عدالت میں پیش ہونے کا حکم دے دیا۔

دوران سماعت چیف جسٹس ثاقب نثار نے کہا کہ آصف ہاشمی کوفوری واپس لایاجائے،ڈپٹی اٹارنی جنرل ساجد الیاس نے عدالت کو بتایا کہ آصف ہاشمی کاپاسپورٹ زائدالمعیاد ہوچکاہے،ان کی واپسی کےلئے کمیٹی بنادی گئی ہے،اس پر چیف جسٹس پاکستان نے کہا کہ کمیٹی بناکرمعاملہ سردخانے میں نہ چلاجائے،کمیٹی بن گئی تو کل رپورٹ چاہیے۔

چیف جسٹس ثاقب نثار نے ریمارکس دیتے ہوئے کہا کہ آصف ہاشمی کو گرفتار نہ کیا جائے، 5سال کا پاسپورٹ آصف ہاشمی کو جاری کر دیں ۔

وکیل آصف ہاشمی نے عدالت کو بتایا کہ آصف ہاشمی عدلیہ کا سامنا کرنے کے لیے تیار ہیں ،چیف جسٹس نے کہا کہ اگر ایسا ہے تو آصف ہاشمی کے ساتھ تعاون کیاجائے ،میڈیارپورٹ ہے کہ آصف ہاشمی رضاکارانہ واپس آنا چاہتے ہیں ۔

وکیل آصف ہاشمی نے عدالت کو بتایا کہ سابق چیئرمین متروکہ وقف املاک پاسپورٹ کےلئے اپلائی کر چکے ہیں ،چیف جسٹس نے کہا کہ یو اے ای میں سفارت خانے کو ہدایت دے دیں،آصف ہاشمی آئندہ پیر کو عدالت میں پیش ہو جائیں۔

اس پر وکیل آصف ہاشمی نے کہا کہ 15 دن کا وقت دے دیں،عدالت نے آصف ہاشمی کی15دن کا وقت دینے کی استدعا مستردکرتے ہوئے کہا کہ آپ کو کوئی گرفتار نہیں کرے گا۔

مزید : قومی /علاقائی /اسلام آباد