شریف خاندان کے خلاف نیب کا ضمنی ریفرنس ایک سوشہ اور زخم کے سوا کچھ نہیں: دانیا ل عزیز

شریف خاندان کے خلاف نیب کا ضمنی ریفرنس ایک سوشہ اور زخم کے سوا کچھ نہیں: دانیا ...
شریف خاندان کے خلاف نیب کا ضمنی ریفرنس ایک سوشہ اور زخم کے سوا کچھ نہیں: دانیا ل عزیز

  

اسلام آباد (ڈیلی پاکستان آن لائن) پاکستان مسلم لیگ (ن) کے رہنماءاور وفاقی وزیر نجکاری دانیال عزیز نے کہا ہے کہ قومی احتساب بیورو (نیب)  کی جانب سے شریف فیملی کے خلاف دائر کیے گئے ضمنی ریفرنسز کی کوئی قانونی حیثیت نہیں ہے ، ضمنی ریفرنس میں کوئی نیا اثاثہ اور الزام تو دور ایک شواہد تک نہیں مل سکا،عدالت عظمی نے نیب کو چھ ماہ کی مدت دی تھیاور مدت ختم ہونے میں محض ڈیڑھ مہینہ رہ گیا ہے ،نیب ریفرنس منہ کے بل گررہے ہیں ،نیب کا ضمنی ریفرنس جاری داستان میں ایک نیا شوشہ اور زخم کے سوا کچھ نہیں ہے۔

پی آئی ڈی میں پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے مسلم لیگ (ن) کے رہنما و وفاقی وزیر نجکاری دانیال عزیز کا کہنا تھا کہ چیئرمین نیب اور مانیٹری جج ضمنی ریفرنسز دائر ہونے سے پہلے میڈیا تک پہنچنے۔ جے آئی ٹی کے سربراہ واجد ضیاءکے خلاف بھی اپنے کزن کو 40ہزار پاﺅنڈ کی تحقیقات کے لئے خدمات حاصل کرنے پر ریفرنس لایا جائے ۔

لیگی رہنما کا کہنا تھا کہ پانامہ کیس کے حوالے سے نیب کے ضمنی ریفرنس کے حوالے سے تاثر دیا جارہا ہے کہ اس میں نئے شواہد ہیں ،حیرانگی اس بات پر ہوئی کہ ضمنی ریفرنس کی جو تفصیلات عدالت کے ذریعے فریقین تک پہنچنی تھی وہ اس سے پہلے ہی میڈیا کو بھجوا دیں گئیں ۔قومی احتساب بیورو (نیب) بتائے کہ نیب آرڈیننس کی کونسی شق ریفرنسز کی تشہیر کا اختیار دیتا ہے۔

دانیال عزیز کا مزید کہنا تھا کہ ایک خاص تاثر قائم کرنے کے لئے کیس کو زیادہ استعمال کیا جارہا ہے لیکن ضمنی ریفرنس دیکھ کر یہ انکشاف ہوا کہ اس میں کوئی نیا اثاثہ ،الزام یا شواہد نہیں ہیں، نیب نے خود اعتراف کیا کہ کوئی نہیں چیز ضمنی ریفرنس میں شامل نہیں ہے۔

مزید : قومی