’ہم یہ جہاز نہیں اُڑائیں گے‘ اسرائیلی حکومت نے ایسے لوگوں کو ملک سے نکالنے کے لئے جہاز میں بٹھادیا کہ پائلٹس نے جہاز اُڑانے سے ہی صاف انکار کردیا

’ہم یہ جہاز نہیں اُڑائیں گے‘ اسرائیلی حکومت نے ایسے لوگوں کو ملک سے نکالنے ...
’ہم یہ جہاز نہیں اُڑائیں گے‘ اسرائیلی حکومت نے ایسے لوگوں کو ملک سے نکالنے کے لئے جہاز میں بٹھادیا کہ پائلٹس نے جہاز اُڑانے سے ہی صاف انکار کردیا

  

تل ابیب(مانیٹرنگ ڈیسک) اسرائیلی حکومت نے گزشتہ دنوں کچھ ایسے لوگوں کو ملک سے نکالنے کے لیے طیارے میں بٹھا دیا کہ ای ایل اے ایل اسرائیل ایئرلائنز کے پائلٹوں نے اس جہاز کو اڑانے سے ہی صاف انکار کر دیا۔ ویب سائٹ eritreahub.org کی رپورٹ کے مطابق اسرائیلی حکومت نے اس طیارے میں افریقی ممالک سوڈان اور اریٹریا کے پناہ گزینوں کو سوار کرا دیا تھا۔ اس وقت اسرائیل میں لاکھوں کی تعداد میں ان ممالک کے پناہ گزین موجود ہیں جنہیں حکومت جبری طور پر ملک سے نکالنا چاہتی ہے۔

رپورٹ کے مطابق اسرائیلی حکومت نے ان پناہ گزینوں کو دو آپشن دے رکھے ہیں کہ یا تو ملک چھوڑ کر چلے جاﺅ یا پھر یقینی طور پر جیل جانے کے لیے تیار رہو۔حکومت انہیں ای ایل اے ایل اسرائیل ایئرلائنزکے ذریعے واپس ان کے ملک بھیجنا چاہتی ہے لیکن کوئی بھی پائلٹ اس مقصد کے لیے جانے والی پروازیں لیجانے کو تیار نہیں۔ گزشتہ روز چار پائلٹوں میڈیا پر آ کر باقاعدہ اعلان کیا ہے کہ وہ ان لوگوں کو واپس موت کے منہ میں دھکیلنے نہیں لیجائیں گے۔ اگر انہیں واپس ان کے ملک بھیجا جاتا ہے تو انہیں وہاں قتل کر دیا جائے گا چنانچہ ہم کبھی وہ پروازیں نہیں اڑائیں گے جن میں پناہ گزین سوار ہوں گے۔“

مزید : ڈیلی بائیٹس /بین الاقوامی