انٹرنیٹ پر فحش فلمیں دیکھنے والوں کی 3 اقسام

انٹرنیٹ پر فحش فلمیں دیکھنے والوں کی 3 اقسام
انٹرنیٹ پر فحش فلمیں دیکھنے والوں کی 3 اقسام

  

لندن(نیوز ڈیسک) فحش فلموں کی لعنت نے نوجوان نسل کی بہت بڑی تعداد کو اپنی لپیٹ میں لے رکھا ہے۔ سائنسدانوں کا کہنا ہے کہ اگرچہ فحش فلموں میں ان سب کی دلچسپی بظاہر ایک جیسی ہوتی ہے لیکن حقیقت میں انہیں تین مختلف اقسام میں تبدیل کیا جا سکتا ہے۔ 

ویب سائٹ INDY100 کے مطابق سائنسی جریدے ’جرنل آف سیکچوئل میڈیسن‘ میں شائع ہونے والی تحقیق کے مطابق فحش فلمیں دیکھنے والوں کو ان کی دلچسپی اور نفسیاتی کیفیت کی بناء پر تین اقسام میں تقسیم کیا جاسکتا ہے۔ ان کی پہلی قسم وہ ہے جو محض تفریح کے لئے فحش مواد دیکھتے ہیں۔ یہ لوگ عموماً اپنی ازدواجی زندگی سے مطمئن ہوتے ہیں لیکن پھر بھی کبھی کبھار تفریح کے لئے فحش مواد دیکھ لیتے ہیں۔ یہ وہ لوگ ہیں جنہیں فحش فلموں سے سب سے کم نقصان پہنچتا ہے۔ ان کی تعداد تقریباً 75 فیصد ہے اور یہ ہفتے میں مجموعی طور پر تقریباً 24 منٹ فحش مواد دیکھتے ہیں۔ ان میں زیادہ تر تعداد خواتین کی ہے۔

دوسری قسم کے وہ لوگ ہیں جو ہفتے میں اوسطاً تقریباً 110 منٹ فحش مواد دیکھتے ہیں۔ انہیں فحش مواد کی شدید لت میں مبتلا قرار دیا جاسکتا ہے۔ یہ عام طور پر اپنی تنہائی میں فحش مواد دیکھتے ہیں اور ان میں بیشتر تعداد مردوں کی ہے۔ یہ زیادہ دیر تک فحش مواد دیکھے بغیر رہ نہیں پاتے اور انہیں ہی فحش فلمیں دیکھنے کے نتیجے میں سب سے زیادہ نفسیاتی مسائل کا سامنا کرنا پڑتا ہے۔

تیسری قسم کے وہ لوگ ہیں جو فحش مواد کے عادی تو نہیں ہوتے لیکن کبھی کبھار انہیں اس کی سخت ضرورت محسوس ہوتی ہے۔ یہ لوگ فحش فلمیں دیکھ کر خود کو پہلے سے زیادہ پرسکون محسوس کرتے ہیں۔ ان میں سے تقریباً 12.7 فیصد ایسے ہوتے ہیں جو اپنے ازدواجی تعلقات سے مطمئن نہیں ہوتے لیکن فحش مواد دیکھنے سے انہیں ایک طرح کی جسمانی تحریک ملتی ہے۔ یہ ہفتے میں اوسطاً 17منٹ فحش موا دیکھتے ہیں۔

مزید : ڈیلی بائیٹس