مغوی لڑکی کی بازیابی کیلئے ازخودنوٹس کیس،ہائیکورٹ کا جعلی پیر کو شامل تفتیش،پولیس کو 12 فروری تک پورٹ پیش کرنے کا حکم

مغوی لڑکی کی بازیابی کیلئے ازخودنوٹس کیس،ہائیکورٹ کا جعلی پیر کو شامل ...
مغوی لڑکی کی بازیابی کیلئے ازخودنوٹس کیس،ہائیکورٹ کا جعلی پیر کو شامل تفتیش،پولیس کو 12 فروری تک پورٹ پیش کرنے کا حکم

  

لاہور(ڈیلی پاکستان آن لائن)لاہور ہائیکورٹ نے 3 سال سے اغوا لڑکی کی بازیابی کیلئے ازخودنوٹس کیس میںبلال گنج کے جعلی پیرکو شامل تفتیش کرنے کا حکم دیدیا،عدالت نے ایس ایس پی ذیشان کو 12 فروری تک تحقیقاتی رپورٹ پیش کرنے کا حکم دیدیا۔

تفصیلات کے مطابق چیف جسٹس لاہور ہائیکورٹ جسٹس سردار شمیم خان کی سربراہی میں بنچ نے 3 سال سے اغوا لڑکی کی بازیابی کیلئے ازخود نوٹس کی سماعت کی ،پولیس حکام عدالت میں پیش ہوئے ۔

چیف جسٹس ہائیکورٹ نے استفسار کیا کہ 2015 سے لاپتہ لڑکی کوبازیاب کیوں نہیں کرایاگیا؟ایس ایس پی ذیشان نے کہا کہ پرانا کیس ہے،لڑکی کی بازیابی کیلئے تحقیقات جاری ہیں۔

عدالت نے بلال گنج کے جعلی پیر کو شامل تفتیش کرنے کا حکم دیدیا اور ایس ایس پی ذیشان کو 12 فروری تک تحقیقاتی رپورٹ پیش کرنے کا حکم دیدیا ۔

مزید : قومی /علاقائی /پنجاب /لاہور