انتخابات میں مبینہ دھاندلی سے متعلق پارلیمانی کمیٹی کا اجلاس 30 جنوری تک ملتوی،رحمان ملک کا رولز کی کاپی پیشگی نہ دینے پر احتجاج

انتخابات میں مبینہ دھاندلی سے متعلق پارلیمانی کمیٹی کا اجلاس 30 جنوری تک ...
انتخابات میں مبینہ دھاندلی سے متعلق پارلیمانی کمیٹی کا اجلاس 30 جنوری تک ملتوی،رحمان ملک کا رولز کی کاپی پیشگی نہ دینے پر احتجاج

  

اسلام آباد(ڈیلی پاکستان آن لائن)انتخابات میں مبینہ دھاندلی سے متعلق پارلیمانی کمیٹی کے اجلاس میں رولز کی کاپی پیشگی نہ دینے پر رحمان ملک نے احتجاج کیا ،نوید قمر نے کہا کہ حکومت انتخابات میں دھاندلی کی تحقیقات سے کیوں بھاگ رہی ہے؟۔

تفصیلات کے مطابق پارلیمنٹ ہاﺅس میں انتخابات میں مبینہ دھاندلی سے متعلق پارلیمانی کمیٹی کااجلاس ہواجس کی صدارت وزیردفاع پرویزخٹک نے کی ، اجلاس میں ذیلی کمیٹی کے پیش کردہ ٹی او آرز کاجائزہ لیاگیا، حکومت اوراپوزیشن نے ذیلی کمیٹی میں ٹی اوآرزجمع کرائے تھے ،مرکزی کمیٹی نے دونوں اطراف کے ٹی او آرز کا جائزہ کیا ،انتخابات میں مبینہ دھاندلی سے متعلق پارلیمانی کمیٹی مشترکہ ٹی او آرز دینے کی کوشش کرے گی ۔

وزیر دفاع نے کمیٹی کی ورکنگ کیلئے رولزپیش کردیئے ،پیپلزپارٹی کے سینٹررحمان ملک نے رولز کی کاپی پیشگی نہ دینے پراحتجاج کیا،نوید قمر نے کہا کہ حکومت انتخابات میں دھاندلی کی تحقیقات سے کیوں بھاگ رہی ہے۔رحمان ملک نے کہا کہ رولز کی کاپی ایک ہفتہ پہلے دینی چاہئے، ہمیں رولز پڑھنے کیلئے بھی وقت چاہئے،ن لیگ کے رکن قومی اسمبلی ایاز صادق نے کہا کہ بہتر ہو گا کمیٹی اسمبلی رولزکے مطابق کام کرے۔پارلیمانی کمیٹی نے اجلاس موخر کرنے پر اتفاق کیا آئندہ کمیٹی کااجلاس 30 جنوری کوہوگاجس میں ٹی او آرز پر مشاورت ہوگی۔

مزید : قومی /علاقائی /اسلام آباد