حکومت عوام کے بنیادی مسائل حل نہیں کرسکی،شوبز شخصیات

حکومت عوام کے بنیادی مسائل حل نہیں کرسکی،شوبز شخصیات

  



لاہور(فلم رپورٹر)شوبز کے مختلف شعبوں سے تعلق رکھنے والی شخصیات نے کہا ہے کہ آٹے کے بعد چینی کا بحران بھی سر اٹھا رہا ہے ہماری عوام اس وقت مسلسل دباؤ کا شکار ہے ہر حکومت مسائل کی ذمہ داری پچھلی حکومتوں پر ڈال دیتی ہے لیکن ان کے حل کیلئے کوئی اقدامات نہیں کئے جاتے موجودہ حکومت سے بہت امیدیں وابستہ ہیں۔شوبز شخصیات نے کہا کہ میں ان دنوں مختلف ٹی وی پراجیکٹس میں اہم کردار ادا کررہی ہوں۔ پاکستانی عوام کو اپنے حقوق کا شعور ہی نہیں، انہیں معلوم ہی نہیں بجلی، گیس اور بچوں کی فیسیں کیسے کم کرانے کیلئے باہر نکلنا ہے۔ جب لوگوں کو مسائل کی وجہ سے دکھی دیکھتے ہیں تو دل پریشان ہو جاتا ہے۔خرم شیراز ریاض،شاہد حمید،معمر رانا،مسعود بٹ،حسن عسکری،شانسید نور،میلوڈی کوئین آف ایشیاء پرائڈ آف پرفارمنس شاہدہ منی،صائمہ نور،میگھا،ماہ نور،انیس حیدر،ہانی بلوچ،یار محمد شمسی صابری،سہراب افگن،ظفر اقبال نیویارکر،عذرا آفتاب،حنا ملک،انعام خان،فانی جان،عینی طاہرہ،عائشہ جاوید،میاں راشد فرزند،سدرہ نور،نادیہ علی،شین،سائرہ نسیم،صبا ء کاظمی،سٹار میکر جرار رضوی،آغا حیدر،دردانہ رحمان،ظفر عباس کھچی،سٹار میکر جرار رضوی،ملک طارق،مجید ارائیں،طالب حسین،قیصر ثنا ء اللہ خان،مایا سونو خان،عباس باجوہ،مختار چن،آشا چوہدری،اسد مکھڑا،وقا ص قیدو، ارشد چوہدری،چنگیز اعوان،حسن مراد، حاجی عبد الرزاق،حسن ملک،عتیق الرحمن،اشعر اصغر،آغا عباس،صائمہ نور،خالد معین بٹ،مجاہد عباس، ڈائریکٹر ڈاکٹر اجمل ملک، کوریوگرافروکی سمراٹ،صومیہ خان،حمیرا چنا،اچھی خان،شبنم چوہدری،محمد سلیم بزمی، سفیان، انوسنٹ اشفاق،استاد رفیق حسین،فیاض علی خاں، پروڈیو سر شوکت چنگیزی،ظفر عباس کھچی،ڈی او پی راشد عباس، پرویز کلیم، نجیبہ بی جی ندا یاسر،جویریہ عباسی،ثناء،فرزانہ تھیم،صاحبہ،جویریہ سعود،عینی رباب،حمیرا،عروج اورماریہ واسطی نے کہا کہ پاکستان ہر لحاظ سے زرخیز ملک ہے لیکن بد قسمتی سے اسے ہر دور میں لوٹا گیا ہے۔ پاکستانیوں کو بس موبائل فون، دو پان اور موٹر سائیکل دیدیں وہ خوش ہوجاتے ہیں۔عروج نے کہا کہ ہم لوگ اپنے حقوق کے حوالے آواز اٹھانے کا درست طریقہ نہیں جانتے اور نہ ہی ہماری قوم کو احتجاج کرنا آتا ہے۔ جب لوگوں کو مہنگائی اور حالات کی وجہ سے پریشان دیکھتی ہوں تو میر ے اندر انہیں ہنسانے کا جذبہ بیدار ہو جاتا ہے اور اسی طرح یہ سلسلہ چل رہا ہے۔فنکاروں نے کہا کہ جب تک مہنگائی اور بیروزگاری کا خاتمہ نہیں ہوتا ملک میں مکمل طور پر خوشحالی نہیں آ سکتی اور اس مقصد کے لئے حکومت کو نئی صنعتیں لگانا ہوں اور سرمایہ کاروں کااعتماد بحال کرتے ہوئے کاروبار کے لئے بھرپور ریلیف فراہم کرنا ہو گااسی طرح ہمارا ملک آگے جائے گا

مزید : کلچر