قاروباری آسانیاں پیدا کرنا ریاست کی ذمہ داری ہے،پیاف

قاروباری آسانیاں پیدا کرنا ریاست کی ذمہ داری ہے،پیاف

  



لاہور(نیوز رپورٹر)چیئرمین پاکستان انڈسٹریل اینڈ ٹریڈرز ایسوسی ایشنز فرنٹ (پیاف) میاں نعمان کبیر نے سیئنر وائس چیئرمین ناصر حمید خان اور وائس چیئرمین جاوید اقبال صدیقی کے ہمراہ گلبرگ آفس میں تاجروں کے ایک وفد سے ملاقات میں کہا ہے کہ وزیر اعظم عمران خان کی جانب سے چھوٹے دکانداروں اور اور کاروبار پر ٹیکس انسپیکشن ختم اور لائسنسنگ آسان بنانے کا اقدام خوش آئند ہے۔پاکستان ان چند ممالک میں شامل ہے جہاں مختلف اداروں کے باعث کاروابار کرنا انتہائی دشوار ہے۔ وزیر اعظم نے اس حقیقت کا ادراک کرتے ہوئے ۴۷ مختلف قسم کے لائسنس ختم کرنے کا عمل ۰۳ دن میں مکمل کر کے چھوٹے تاجروں کو سہولتیں دینے کا کہا ہے جو قابل ستائش ہے۔معیشت کے پہیہ چلانے کے لئے ضروری ہے کہ غیر ضروری ٹیکسز ختم کر دیے جائیں اور اس دائرے کو مزید وسیع کیا جائے تاکہ اقتصادی سرگرمیاں بڑھیں۔ چیئرمین پیاف میاں نعمان کبیر نے کہاعام آدمی کو ریلییف دینا اور کاروباری طبقہ کیلئے آسانیاں پیدا کرنا ریاست کی بنیادی ذمہ داری ہے۔انہوں نے کہا کہ سمال سکیل اور کاٹیج انڈسٹری کے لئے بھی اقدامات کئے جائیں اور انکے لئے علیحدہ انڈسٹریل اسٹیٹس بنائے جائیں۔ انھوں نے کہا کہ نئے انڈسٹریل اسٹیٹس کے ساتھ ساتھ بیمار یونٹس کے revival کیلئے بھی کوششیں کی جایئں گی اور ان کی وجوہات پر کام کیا جائے گا۔ تمام کاروباری برادری کی مشاورت سے انڈسٹریز کے مسائل کو ترجیحی بنیادوں پر حل کیا جائے اور انڈسٹریل اسٹیٹس کے مسائل مرحلہ وار حل کروائے جائیں گے۔

تاکہ صنعتی استعداد کار میں اضافی ممکن ہو سکے۔

مزید : کامرس