وہاڑی، میلسی، خوفناک حادثے، 4نوجوان جاں بحق، ڈیرہ رحیم یار خان میں دو ہلاکتیں

  وہاڑی، میلسی، خوفناک حادثے، 4نوجوان جاں بحق، ڈیرہ رحیم یار خان میں دو ...

  



وہاڑی‘میلسی‘ ڈیرہ‘ رحیم یار خان ‘ صادق آباد (بیورو رپورٹ‘ نمائندہ خصوصی‘ سٹی رپورٹر‘ نامہ نگار) تیز رفتار بس نے تین موٹر سائیکل سواروں کو روند ڈالا جس کے باعث 9ویں جماعت کے طالب علم سمیت دو جاں بحق اور ایک نوجوان شدید زخمی ہوگیا۔تفصیل کیمطابق میلسی کے محلہ صدیق اکبر کا رہائشی اور9ویں جماعت کا طالب علم محمدسجاد اپنے ساتھیوں محلہ سبزی منڈی میلسی کے20سالہ محمد عثمان اور ویریسی واہن کے25سالہ محمد فرحان کے(بقیہ نمبر13صفحہ12پر)

ہمراہ موٹر سائیکل پر سوار ہوکر میلسی سائیفن روڈ پر جارہے تھے کہ ملتان براستہ میلسی بہاولنگر جانے والی بس ارا نمبر2 کے قریب موٹر سائیکل پر چڑھ گئی جس کے نتیجے میں محمد سجاد موقع پر جاں بحق اور محمد عثمان اور محمد فرحان شدید زخمی ہوگئے دونوں زخمیوں کو تحصیل ہیڈ کوارٹر ہسپتال میلسی داخل کرایا گیا محمد فرحان کو تشویشناک حالت کے پیش نظر وکٹوریہ ہسپتال بہاولپور ریفر کیاگیا جومہلک زخموں کی تاب نہ لا تے ہوئے راستے میں دم توڑ گیا محمد عثمان کو ٹی ایچ کیو ہسپتال میلسی میں طبی امداد دی جا رہی ہے پولیس تھانہ میلسی نے ڈرائیور اور کلینر کو گرفتار کر لیا۔ میاں چنوں روڈ پر 18 ڈبلیو بی کے قریب ریت کی ٹرالی اور موٹرسائیکل میں تصادم سے موٹر سائیکل سوار دونوں نوجوان جان بحق ایک موقع پر دم توڑ گیا اور دوسرے کو حالت تشویشناک ہونے پر ہسپتال منتقل کیا اور راستہ میں جاں بحق ہو گیا ذرائع کے مطابق کہ چک نمبر 196 ای بی کے رہائشی محمد بشیر اور محمد اختر موٹرسائیکل پر سوار ہو کر اپنے گھر جا رہے تھے کہ 18 ڈبلیو بی کے قریب تیز رفتاری کے باعث ٹریکٹر ٹرالی سے تصادم ہو گیا جس میں ذرائع کے مطابق محمد بشیر موقع پر جاں بحق ہو گیا جبکہ محمد اختر شدید زخمی ہو گیا جسے ڈی ایچ کیو ہسپتال منتقل کیا گیا بتایا جاتا ہے کہ زخموں کے تاب نہ لاتے ہوئے وہ بھی جاں بحق ہو گیا ہے ذرائع کے مطابق ٹریکٹر ٹرالی ڈرائیور موقع سے فرار ہونے میں ہوگیا جبکہ پولیس نے ضروری کاروائی اور پوسٹ مارٹم کے لئے ہسپتال منتقل کر دیا ہے افسوسناک واقعہ پر عوامی و سماجی حلقوں نے احتجاج کرتے ہوئے مطالبہ کیا ہے میاں چنوں روڈ پر اناڑی ڈرائیوروں کے خلاف کارروائی کی جائے۔ بین الصوبائی کوئٹہ روڈ پر دو تیز رفتار ٹرکوں کے درمیان تصادم۔ایک ڈرائیور شدید زخمی۔ ریسکیو ٹیم نے زخمی کو ٹیچنگ ہسپتال منتقل کر دیا۔ تفصیلات کے مطابق بین الصوبائی کوئٹہ روڈ پر ڈرائیورز کی غفلت، لاپرواھی اور تیز رفتاری کے سبب دو ٹرک ایک دوسرے سے ٹکرا گئے حادثے کے نتیجہ میں ایک ٹرک کاڈرئیور بیس سالہ محمد حنیف شدید زخمی ہوگیا جس کو ریسکیو اہلکاروں نے طبی امداد دینے کے بعد ٹیچنگ ہسپتال کے ٹراما سنٹر منتقل کر دیا جبکہ پولیس نے دونوں گاڑیوں کو قبضہ میں لیکر قانونی کاروائی شروع کر دی۔ ٹریفک حادثہ میں شدید زخمی ہونے والا 60 سالہ شخص ہسپتال میں دم توڑ گیا ہے تفصیل کے مطابق حسین آباد کا رہائشی 60 سالہ محمد ریاض جو کہ موٹر سائیکل پر سوار ہو کر جا رہا تھا کہ سامنے سے آنے والی تیز رفتار کار سے ٹکرا گیا اور شدید زخمی ہو گیا ورثاء نے طبی امداد کیلئے شیخ زید ہسپتال منتقل کیا جہاں طبی امداد کے باوجود محمد ریاض جانبر نہ ہو پایا اور دم توڑ گیا جبکہ مختلف حادثات میں زخمی ہونے والے 58 افراد جن میں خانپور کی 40 سال فرزانہ بی بی شاہنواز کالونی کی 35 سالہ شازیہ بی بی ٹبی لاڑاں کی 25 سالہ فاطمہ بی بی راجن پور کی 34 سالہ زاہرہ بی بی سردار گڑھ کی 35 سالہ عقیل مائی صادق آباد کی 35 سالہ نسیم بی بی چک 125 کا 27 سالہ محمد عثمان جناح پارک کا 27 سالہ عرفان بستی کھوکھراں کا 15 سالہ محمد نعیم اور کوٹ حق نواز کا رہائشی 13 سالہ محمد یاسر وغیرہ کو ہسپتال میں طبی امداد فراہم کی جارہی ہے۔ قومی شاہراہ پرسنجرپورآلوگوٹھ کے قریب کراچی سے صادق آباد جانے والی ائیرکنڈیشنڈ بس اوورٹیکنگ و اوورلوڈنگ کے باعث بے قابو ہوکر الٹ گئی کوچ میں تقریبا 28لوگ سوار تھے جن میں سے 4شدید زخمی ہو ئے واقع کی اطلاع فوری طور پر ریسکیو 1122کو دی گئی جس نے موقع پر پہنچ کر 5زخمیوں میں سے 1کوموقع پرابتدائی طبی امداد فراہم اور5زخمیوں کو تحصیل ہیڈکوارٹرصادق آباد منتقل کردیا جہاں پر ان کی حالت خطرے سے باہر بتائی جارہی ہے۔مسافروں نے میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے بتایا کہ مذکورہ کوچ کا کوٹ سبزل کے مقام پر تیز رفتاری اور اوور ٹیکنگ کی وجہ سے چالان بھی کیا گیا تھا جب کہ حادثہ ٹھیک 5منٹ بعد پیش آگیا۔ڈرائیور موقع سے فرار ہو گیا۔ اسسٹنٹ کمشنر عامر افتخار موقع پر پہنچ گئے انہوں نے جائے وقوعہ کا جائزہ لیا بعدازاں مسافروں کو ان کی منزل کی طرف روانہ کر دیا گیا ہے۔

مزید : ملتان صفحہ آخر