نواز شریف کیخلاف سی پیک منصوبے کی وجہ سے سازش کی گئی‘ رانا ظفر اقبال

  نواز شریف کیخلاف سی پیک منصوبے کی وجہ سے سازش کی گئی‘ رانا ظفر اقبال

  

ملتان (خبر نگار خصوصی) لائرز فورم ملتان کے زیر اہتمام ڈسٹرکٹ بار ایسوسی ایشن میں نو منتخب صدر پنجاب رانا محمد ظفر اقبال کے اعزاز میں تقریب کا انعقاد کیا گیا۔ تقریب کے مہمان خصوصی صدر مسلم لیگ ن لائرز فورم پنجاب رانا محمد ظفر اقبال نے کہا ہے کہ ہم لودھراں والے پورے ملک میں خود کا ملتانی کہہ کر تعارف کراتے ہیں۔ رحیم یار خان، بہاولپور اور بہاولنگر کے بار ایسوسی ایشن کے صدور کا تعلق بھی مسلم لیگ ن سے ہے۔ تنظیم سازی کا آغاز ڈویڑن کی سطح پر شروع کردیا گیا ہے۔ عاصمہ جہانگیر کانفرنس میں ڈیڑھ سو خواتین نے شرکت کی جن کا تعلق مسلم لیگ ن سے ہی تھا۔ پارٹی عہدیداروں سے بات ہوئی ہے کہ آئندہ الیکشن (بقیہ نمبر14صفحہ12پر)

میں خواتین کو ایم پی اے کی 10 نشستیں دی جائیں گی تاکہ پارلیمنٹ میں بھی نمائندگی ہو۔ لاء آفیسر بھی لائرز فورم کے ذریعے لگائیں جائیں گے۔ قائد میاں محمد نواز شریف کو اللّٰہ پاک صحت دیں۔ وہ سحر انگیز شخصیت ہیں۔ وہ محبت کرنے والے اور مشکلات میں ساتھ کھڑے ہوتے ہیں۔ دنیا تسلیم کرتی ہے کہ وہ ایک بہادر شخص ہیں۔ میاں نواز شریف کے خلاف سی پیک منصوبے کی وجہ سے بڑی سازش کی گئی ہے۔ قبل ازیں مسلم لیگ ن لائرز فورم ملتان کے صدر محمد اظہر مغل نے کہا ہے کہ وہ چاہتے ہیں کہ قیادت ملتان صدارت کی ذمہ داریاں ان سے لیکر کسی اور کارکن کو دیں تاکہ وہ پارٹی کا کام زیادہ بہتر طریقے اور اگلی سطح پر انجام دیں اگر پارٹی اسی عہدے پر فائز رکھنا چاہتی ہے تو بھی کوئی اعتراض نہیں۔ وہ طالب علمی کے دور سے ہی سیاست کررہے ہیں۔ 2013 سے قبل ملک میں حالات بے قابو تھے۔ روزانہ دہشت گردی کی وجہ سے سینکڑوں لوگ جانبحق ہوتے تھے۔ لیکن میاں نواز شریف کی قیادت میں ملک میں بم دھماکوں کو روکا گیا۔ پہلے چار سال میں بہترین کارکردگی کی اور ملک کے تمام بڑے بڑے مسائل کو یقینی طور پر حل کیا گیا۔کشمیر کے لوگوں کے حالات دیکھ کر دل خون کے آنسو روتا ہے۔ موجودہ حکومت نے کشمیر کا سودا کیا لیکن اب چند مہینوں میں مسلم لیگ ن کی حکومت بنے گی اور ہم کشمیر واپس لیں گے۔ امریکی صدر بل کلنٹن نے کہا تھا کہ وہ میاں نواز شریف کو دیکھنا چاہتے ہیں جو دو تہائی اکثریت سے وزیراعظم منتخب ہوئے۔ آج وزیراعظم عمران خان کا امریکہ میں استقبال بھی اپنے ہی وزیر خارجہ کرتے ہیں۔ ان حالات میں ملک کو دھکیلنے والے اداروں کو قوم جھولیاں اٹھا کر بد دعائیں دے رہی ہے۔ وزیر اعظم بننے کے لئے عمران خان نے ملک کو داؤ پر لگا دیا۔ الیکشن کو منیج کیا گیا۔ وہ بہت ساری چیزوں کے گواہ ہیں۔اس قوم و ملک کو آگے لیکر جانا ہے۔ محترمہ مریم نواز نے قوم کی خاطر بیمار والدہ کو چھوڑ کر جیل جانا پسند کیا۔ عمران خان نے ڈونلڈ ٹرمپ سے پہلی ملاقات میں کشمیر دے دیا اب دوسری ملاقات میں اللّٰہ خیر کرے۔ میاں نواز شریف کا ساتھ دیں۔ وکلاء ایسی طاقت ہیں جو ہر چٹان کے سامنے کھڑی ہوتی ہیں۔ کالے کوٹ کو میاں نواز شریف کا ساتھ دینا چاہیے تاکہ نواز شریف کو واپس لایا جائے۔ لائرز فورم کی ممبر سازی شروع کررہے ہیں۔ وہ تمام کارکنان کو خراج تحسین بھی پیش کرتے ہیں۔ شوکت بنگش نے کہا ہے کہ موجودہ حکومت کے خلاف سیسہ پلائی دیوار بن کر کھڑے ہیں، ہم کسی شخص کسی عہدے سے ڈرنے والے نہیں ہیں۔ مسلم لیگ ن نے ثابت کیا وہ مشکل حالات میں پارٹی کے ساتھ ہیں۔ حکومت نے نیب کو استعمال کرتے ہوئے کیسز بنائے لیکن وہ میاں نواز شریف کے ساتھ کھڑے ہیں۔ میاں محمد نواز شریف نے اپنے ذمہ یہ کام لیا ہے کہ گلشن کا تحفظ کرنا ہے۔ مریم نواز آئندہ مستقبل میں بڑی لیڈر ہونگی۔ قیادت نے اگر ڈیل کرنی ہوتی تو اتنی مشکلات کا سامنا نہ کرتے۔ آج ہر طبقے سے تعلق رکھنے والے مشکلات سے دوچار ہیں۔ حکومت کی پالیسیوں نے متوسط طبقے سے روٹی کا نوالہ چھین لیا۔پورے ملک کو گروی رکھنے کے باوجود کوئی ترقیاتی کام نہیں کیا گیا۔اس حکومت کی وجہ سے مستقل میں سبزی تولہ کے حساب سے فروخت ہوگی۔ پارٹی کی آواز پر ثابت کریں گے کہ ہم ان کے ساتھ ہیں۔ ملتان میں مسلم لیگ ن کے لیے اظہر مغل کا کام قابل ستائش ہے۔ محمد اظہر جھکڑ نے کہا کہ قیادت کے حکم پر اول دستے میں شامل ہونگے۔ 2013 میں مسلم لیگ ن کی حکومت بنی تو ملک میں اندھیرے چھائے ہوئے تھے۔ کوئی راستہ بھی موجود نہیں تھا کہ ملک ترقی کے راستے پر گامزن ہوسکے لیکن مسلم لیگ ن کی قیادت نے ملک میں ترقیاتی کام کیے بجلی، ہیلتھ اور تعلیم پر توجہ دیکر مسائل کو حل کیا گیا۔سٹیج سیکرٹری کے فرائض فراست علی بھٹی نے انجام دیے۔ تقریب میں ضیاء حیدر زیدی، رانا نوید، ظفر قادری، رانا محمد عمران انجم، مس عاصمہ جبیں، سجاد سپرا، بلال گرمانی، محمد شفیق انصاری، محمد ندیم چوہدری، محمد اعجاز لودھی، حفیظ خان بلوچ، چوہدری محمد اکبر، میڈم فرزانہ رانا، روبینہ رانا،ملک طاہر، طاہر ریاض قرشی، مظفر انصاری، راؤ افتخار، عبدالرحمن جوئیہ، نعیم کلیمی، سرور خلیل صمدانی،عبدالباسط، عتیق الرحمن، خاور سلیم، محمد رمضان، رانا مبشر،راؤ امجد،شیخ اسلم،شیخ عمران سمیت دیگر وکلاء نے خطاب و شرکت کی۔

رانا ظفر اقبال

مزید :

ملتان صفحہ آخر -