گورنمنٹ شہباز شریف ہسپتال‘ خون ٹیسٹ کرنیکی مشین خراب‘ مریض مایوس

  گورنمنٹ شہباز شریف ہسپتال‘ خون ٹیسٹ کرنیکی مشین خراب‘ مریض مایوس

  



ملتان (وقائع نگار)سال نو میں بھی پاکستان تحریک انصاف حکومت کے عوام کو صحت کے حوالے سے دینے والے طبی سہولیات کے دعوے دھرے کے دھرے رہ گئے۔بنیادی طبی سہولیات میسر نہ ہونے سے مریض رل گئے۔ گورنمنٹ شہباز شریف ہسپتال میں خون کے ٹیسٹ کرنے والی مشین (سی ڈی سی) گزشتہ ایک سے ہفتہ سے خراب پڑی ہے۔جسکی وجہ سے مریض بازار سے مہنگے داموں ٹیسٹ (بقیہ نمبر16صفحہ12پر)

کروانے پر مجبور ہوچکے ہیں۔تفصیل کے مطابق پاکستان تحریک انصاف کی حکومت کو ایک سال سے زائد کا عرصہ بہت چکا ہے۔مگر اس کے باوجود مذکورہ حکومت کی جانب سے کیئے گئے وعدہ صرف وعدے بن کر سامنے آرہے ہیں۔جبکہ پی ٹی آئی حکومت عوام کو مہنگائی کا طوفان میں بے یارو مددگار چھوڑ دیا ہے۔یہاں تک کہ عوام طبی سہولت جیسی بنیادی سہولیات دینے میں بالکل ناکام ہو چکی ہے۔جسکی وجہ سے متوسط طبقہ کے لوگ علاج معالجہ سے محروم رہنے لگے ہیں۔ کیونکہ حکومت نے تشخیصی ٹیسٹوں کے ریٹس پر اضافہ کیا ہوا ہے۔حالانکہ سابقہ حکومت میں صحت سے متعلقہ ٹیسٹ فری یا کاسٹ پرائس پر ہو جایا کرتے تھے۔مگر موجودہ حکومت نے فری ٹیسٹوں کی سہولت عوام کیلئے ختم کر دیئے ہیں۔جو غریب مریضوں کی مشکلات میں اضافہ کر رہے ہیں۔نشتر ہسپتال۔کارڈیالوجی ہسپتال۔شہباز شریف ہسپتال۔سول و فاطمہ جناح کیمپس۔ چلڈرن کمپلیکس۔ٹی ایچ کیو اور دیہی و بنیادی مراکز میں فری ٹیسٹ میسر نہیں ہیں۔عوام رل گئی ہے۔مگر کوئی حکومتی ارکان اس طرف متوجہ ہی نہیں ہو رہا ہے۔مزہد برآں شہباز شریف میں گزشتہ ایک ہفتہ سے خون کے ذریعے تشخیصی ٹیسٹوں کرنے والی مشین(سی ڈی سی) گزشت ایک ہفتہ سے خراب پڑی ہے۔جسکو تاحال ٹھیک نہیں کروایا گیا۔شہریوں نے صحت کے اعلی حکام سے مذکورہ صورت حال پر فوری نوٹس لینے کا مطالبہ کیا ہے۔جبکہ محکمہ صحت حکام کا کہنا ہے کہ کئی مریضوں کو روزانہ کاسٹ پرائس پر ٹیسٹ کی سہولت دی جاتی ہے۔ان ڈور مریضوں کو مفت علاج معالجہ کی سہولت آج بھی دی جارہی ہیں

ٹیسٹ

مزید : ملتان صفحہ آخر