وزیراعظم کا ہر بات میں جھوٹ بولنا ملک کیلئے اچھا نہیں،مصطفی کمال

وزیراعظم کا ہر بات میں جھوٹ بولنا ملک کیلئے اچھا نہیں،مصطفی کمال

  



کراچی(اسٹاف رپورٹر)پاک سرزمین پارٹی کے چیئرمین مصطفی کمال نے کہاہے کہ وزیراعظم ہر بات میں جھوٹ بولتے ہیں اور یو ٹرن لیتے ہیں،یہ ملک کے لئے اچھا نہیں ہے، وفاقی،صوبائی اور شہری حکومتیں تمام کی تمام نااہل ہے، یہاں مسائل کے حل سے زیادہ آئی جی کی تبدیلی اور آٹے کے بحران کا شور ہے، کوئی بتائے گا کہ یہاں کیسی جمہوریت ہے۔ پاکستان ہاؤس کراچی میں پریس کانفرنس کرتے ہوئے چیئرمین پی ایس پی مصطفی کمال نے وفاقی اور صوبائی حکومتوں پر تنقید کرتے ہوئے کہاکہ کن لوگوں کے ہاتھوں میں پاکستان ہے، سندھ حکومت مکمل ناکام ہوچکی ہے، سندھ کا برا حال ہے کوئی کام بغیر پیسے کے نہیں ہوتا، ایک وفاقی وزیر کراچی صاف کرنے نکلے تھے، صرف ٹوئٹرپرصفائی کی اور چلتے بنے۔انہوں نے کہا کہ اسد عمر نے کہا کہ وہ سندھ کے بلدیات کے قانون کو عدالت میں چیلنج کریں گے۔مصطفی کمال نے کہاکہ جب کے پی اور پنجاب نے بلدیاتی نظام بنایا تو کیا سندھ سے مشاورت کی؟۔وفاقی حکومت کو تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے چیئرمین پی ایس پی نے کہاکہ وزیراعظم کراچی کو 162 ارب روپے دینے کی بات کرتے ہیں لیکن وزیراعلی سے بات ہی نہیں کررہے تو بہتری کیسے ہوگی،ساتھ ہی انہوں نے وفاق کو آئی جی سندھ کی تبدیلی میں رکاوٹ نہ ڈالنے کا مشورہ دیااورکہاکہ وفاقی کو آئی جی سندھ کی تبدیلی میں رکاوٹ نہیں ڈالنا چاہئے، اگرسندھ حکومت اس آئی جی کی تبدیلی چاہتی ہے توتبدیل ہونا چاہیے۔انہوں نے کہا کہ نفرت کی سیاست ختم، سندھ میں لوگ پی ایس پی کے جھنڈے تلے جمع ہو رہے ہیں، لوگوں کے ذہن میں سوال ہے کہ لاڑکانہ جا کر کیسے کامیابی حاصل کرسکتا ہوں۔مصطفی کمال نے کہا کہ کے فور کے پرانے ڈیزائن پر کام نہ کرکے کئی برس ضائع کئے گئے ہیں، معلوم ہوا ہے کے فور پرانے ڈیزائن پر بنایا جائے گا، ہم تو پہلے ہی کہتے تھے پرانے ڈیزائن میں کوئی مسئلہ نہیں ہے۔مصطفی کمال نے کہا کہ پانی کی موٹروں کا افتتاح چیئرمین خود جاکر کرتا ہے، وزیراعلی اور بلاول نے پانی کی چار موٹروں کا افتتاح کیا ہے، کس جمہوریت میں وزیر اعلی پانی اور سیوریج کے منصوبوں کا افتتاح کرتا ہے؟۔انہوں نے کہاکہ سندھ حکومت عوام کی خدمت میں مکمل طور پر ناکام ہوچکی،سندھ میں اربوں روپے خرچ ہونے کے باوجود بھی بچے اسکولوں سے باہر ہیں۔انہوں نے کہاکہ وزیراعلی اوربلاول نے شکوہ کیا ہے کہ وفاق تعاون نہیں کر رہا، تمام مسائل کی وجہ وفاق کو قرار دینا بھی سراسر غلط ہے، کراچی کی شہری حکومت کرپشن میں لگی ہوئی ہے۔اس موقع پر متحدہ قومی موومنٹ پاکستان کو بھی آڑے ہاتھوں لیتے ہوئے مصطفی کمال نے کہا کہ حکومت چاہے ختم ہوجائے مگر ایم کیو ایم والے کہیں نہیں جانے والے، اس کے علاوہ مصطفی کمال نے مئیر کراچی کا نام بھی ای سی ایل میں ڈالنے کا مطالبہ بھی کیا۔

مزید : صفحہ اول