تحریک انصاف پارٹی ممبر شپ مہم کے دوسرے مرحلے میں ایم سیز  کی تعداد میں دوگنا اضافہ

تحریک انصاف پارٹی ممبر شپ مہم کے دوسرے مرحلے میں ایم سیز  کی تعداد میں دوگنا ...
تحریک انصاف پارٹی ممبر شپ مہم کے دوسرے مرحلے میں ایم سیز  کی تعداد میں دوگنا اضافہ

  



جدہ(محمد اکرم اسد) پاکستان تحریک انصاف سعودی عرب کے صدر عقیل آرائیں نے کہا ہے کہ پارٹی نظام آن لائن ہے ، شفاف ممبر شپ ہو رہی ہے پہلے کی طرح کا نظام نہیں تمام معاملات اسلام آباد سے چل رہے ہیں اور آن لائن اگر کسی کو ہم سے شکایت یا میری زات سے مسلۂ ہے تو وہ آن لائن جا کر میری شکایت کر سکتا ہے اسکو وہاں سے جواب مل جائے گا جبکہ پاکستان تحریک  انصاف سعودی عرب نے پارٹی  ممبر شپ مہم کا دوسرا مرحلہ مکمل کر لیا ہے اور ایم سیز کی تعداد 35  سے بڑھ کر 72ہو گئی ہے اور مینجمنٹ کمیٹی تحلیل کر دی گئی ہے ۔

پاکستان تحریک انصاف سعودی عرب کے صدر عقیل آرائیں، نائب صدر قاضی الیاس ،جنرل سیکریٹری خواجہ عماد ،وومن سیکرٹری ثناء شعیب اور جدہ باڈی کے جنرل سیکرٹری لیاقت علی خان نے جدہ میں پریس کانفرنس کرتے ہوئے بتایا کہ  تحریک انصاف پارٹی ممبر شپ مہم کے دوسرے مرحلے میں ایم سیز  کی تعداد میں دوگنا اضافہ ہوا ہے جلد ،ریاض،مکہ اور دمام کا تنظیمی ڈھانچہ مکمل کرنے کے لیے الیکشن شیڈول کا اعلان کیا جائے اور تیسرے مرحلہ میں مدینہ ،ابہا خمیس اور دیگر شہروں میں ممبر شپ مکمل کر کے باڈیاں ترتیب دی جائیں گی ورکر کنفیوز نہ ہوں اپنی پارٹی قوانین کا احترام کرتے ہوئے ممبر شپ کریں ہمارا مقصد اوورسیز کی خدمت اور پارٹی کو مضبوط اور منظم  بنانا ہے ہم تمام ناراض ورکروں کو دعوت دیتے ہیں اب بھی ٹائم ہے اپنی ممبر شپ کریں اور پارٹی کو مضبوط کریں ہمارا مشن ہماری اپنی ذات نہیں ہم نے اپنے ملک پاکستان اور اپنے قائد عمران خان کے مشن اور پارٹی کو مضبوط کرنا ہے ۔

سعودی عرب کے الیکشن عہدے داروں کا چناؤ اور ممبر شپ پارٹی قوانین کے مطابق ہواہے ہم سب کو پارٹی قوانین کا پابند ہونا چاہے پارٹی انشاء اللہ دن بدن سعودی عرب میں مزید منظم اور مضبوط ہو گی چند لوگ عہدوں کی لالچ میں پارٹی ورکرزکو گمراہ کر رہے ہیں ہم اپنی زات نہیں پارٹی کو منظم اور مضبوط کر رہے ہیں ہمیں جو پالیسی پارٹی نے جاری کی ہے اس پر عمل پیرا ہیں ہمارا کیسی گروپ یا شخصیت سے کوئی اختلاف نہیں ہم عمران خان کے سپاہی ہیں۔

مختلف سوالات کے جوابات دیتے ہوئے کہا کہ  میں عقیل آرائیں نے کہا کے میں پارٹی ورکر ہوں جو یہ الزام لگا رہیں انکو شرم آنی چاہے میں میں 2007سے پارٹی ورکر کے طور پے کام کر کے اوپر آیا ہوں ایک ہی رتا میں کیسی دوسری جماعت سے نہیں آیا میں نے پارٹی کے لیے محنت کی ہے کام کیا اور کرتا رہوں گا ابھی آٹھ سیکرٹری ہم نے پورے سعودی عرب میں بنانے ہیں جن کا جلد اعلان کیا جائے گا اور اس میں تمام شہروں کو نمائندگی دیں گے ۔

جو لوگ پارٹی قوانین کو ہی نہیں مانتے ممبر شپ ہی نہیں کی ان کے پاس اب بھی وقت ہے پارٹی کو نقصان نہ پہنچائیں اگر سچے کارکن ہیں تو اپنی ممبر شپ کر کے پارٹی کو مضبوط کریں سابقہ ادوار میں الیکشن جیتنے والا صدر اور ہارنے والا نائب صدر ہوتا تھا اور کارکن اور ورکر آزاد نہیں تھے جبکہ اس وقت عبداللہ نے ورکروں اور کارکنوں کو عزت دی ہے اور خود مختیار بنایا ہے اور ورکر کی عزت بحال ہوئی ہے اگر ریاض یا دیگر شہروں سے پہلے ممبر شپ ہوتی تو تنظئمی ڈھانچہ اور ہوتا ہے نا اپنے نام جدہ کے لیے بھجے تھے جبکہ ریجن میں باقی شہروں میں ممبر شپ اس وقت کم تھی اور ہمارے پینل کی زیادہ تو ہمیں کنٹری لیول پر اس بنیاد پر عہدے دار بنا دیا گیا.

مزید : عرب دنیا /تارکین پاکستان