آٹے کا بحران،چور سرکاری گودام کا تالہ توڑ کر گندم کی سیکڑوں بوریاں لے گئے

آٹے کا بحران،چور سرکاری گودام کا تالہ توڑ کر گندم کی سیکڑوں بوریاں لے گئے
آٹے کا بحران،چور سرکاری گودام کا تالہ توڑ کر گندم کی سیکڑوں بوریاں لے گئے

  



لاڑکانہ(ڈیلی پاکستان آن لائن)آٹے کے بحران نے چوروں کو سرکاری گودام کا رخ دکھادیا۔لاڑکانہ میں چوروں نے سرکاری گودام سے گندم کی سیکڑوں بوریاں چرالیں۔گودام کو کچھ عرصہ قبل سیل کیاگیاتھا۔دوسری جانب پولیس کا کہنا ہے کہ انہیں چوری کی کوئی شکایت نہیں کی گئی تاہم اگر کوئی درخواست آئی تو کارروائی کریں گے۔

نجی ٹی وی 92نیوزکے مطابق لاڑکانہ میں چوروں نے گندم کے سرکاری گودام کو بھی نہ بخشا اورتالے توڑ کر سیکڑوں من گندم چراکر لے گئے۔پولیس کو ابھی باقاعدہ درخواست ہی دائر نہیں کی گئی ۔انچارج فوڈ گودام کے مطابق اطلاع پر آج صبح گودام کھولا تو پتہ چلا سیکڑوں بوریاں غائب ہیں۔انہوں نے بتایا کہ چھ ماہ قبل نیب سکھر نے نصیرآباد فوڈگودام کو چھبیس ہزار بوریاں کم ہونے پر سیل کیاگیاتھا۔

واضح رہے کہ ملک بھر میں آٹے کی قلت کا سامنا ہے جس سے نمٹنے کیلئے حکومت نے گندم درآمد کرنے کا فیصلہ کیاہے۔آٹے کا بحران اسمبلیوں، ٹی وی پروگرامز پر موضوع خاص بنا ہوا ہے۔

ملک بھر میں آٹے کے بحران کی وجہ سے مسلم لیگ ن سمیت تمام اپوزیشن جماعتیں حکومت کو تنقید کا نشانہ بنا رہی ہیں۔محکمہ خوراک پنجاب کے چیئرمین عمر تنویر نے آٹے کے بحران پر تنقید کرنے پر آٹے کا پورا ٹرک ہی ن لیگی رہنما عظمیٰ بخاری کے گھر پہنچا دیا۔محکمہ خوراک کے اہلکاروں نے عظمیٰ بخاری کے گھر کی گھنٹی بجاکر کہا میڈم آٹا لے لیں۔

اس حوالے سے عظمی بخاری کا کہنا ہے کہ پنجاب حکومت کے کہنے پر میرے گھر کے باہر تماشا کیا گیا، محکمہ خوراک کے اہلکار آٹے کے 30، 40 تھیلے گھر کے باہر رکھ کر چلے گئے۔

مزید : علاقائی /سندھ /لاڑکانہ