پاکستان اور ایف اے ٹی ایف حکام کے مذاکرات ختم، رد عمل حوصلہ افزا رہا

پاکستان اور ایف اے ٹی ایف حکام کے مذاکرات ختم، رد عمل حوصلہ افزا رہا
پاکستان اور ایف اے ٹی ایف حکام کے مذاکرات ختم، رد عمل حوصلہ افزا رہا

  



بیجنگ (ڈیلی پاکستان آن لائن) پاکستان اور ایف اے ٹی ایف کے مابین ہونے والے مذاکرات ختم ہوگئے، اجلاس کے دوران پاکستان کی پیشرفت رپورٹ پر رد عمل حوصلہ افزا رہا، ایف اے ٹی ایف کا اجلاس 16سے19فروری کوپیرس میں ہوگا۔

چین کے دارالحکومت بیجنگ میں پاکستان اور ایف اے ٹی ایف کی ٹیم کے مابین مذاکرات 2 روز تک 21 اور 22 جنوری کو ہوئے۔ اجلاس کے دوران پاکستان کی نمائندگی وزیر مملکت برائے ریونیو حماد اظہر نے کی اور پاکستان کا کیس شاندار طریقے سے لڑا۔

ایف اے ٹی ایف کی ٹیم 14 ممالک کے ماہرین پر مشتمل تھی اور اس کی سربراہی چین کے ڈی جی فنانشل انویسٹی گیشن یونٹ کے سربراہ کر رہے تھے۔مذاکرات کے دوران ایف اےٹی ایف حکام نے پاکستان کی رپورٹ پرتفصیلی غورکیا، سیشن میں ایف اےٹی ایف حکام کی جانب سے پاکستانی وفدسے کوئی سوال نہیں کیا گیا۔ مجموعی طورپرپاکستان کی پیشرفت رپورٹ پر رد عمل حوصلہ افزارہا۔

ذرائع کا کہنا ہے کہ ایف اے ٹی ایف کا اگلا اجلاس 16 سے 19 فروری کو پیرس میں ہوگا جس میں جوائنٹ ورکنگ گروپ پاکستان سے متعلق رپورٹ پیش کرے گا۔

مزید : اہم خبریں /قومی