پولیس نے فون پر نسوانی آواز کے ذریعے دوستی کے بعد اغوا کرنے والے ڈاکوؤں کے قبضے سے مغوی بازیاب کرا لیا

پولیس نے فون پر نسوانی آواز کے ذریعے دوستی کے بعد اغوا کرنے والے ڈاکوؤں کے ...
پولیس نے فون پر نسوانی آواز کے ذریعے دوستی کے بعد اغوا کرنے والے ڈاکوؤں کے قبضے سے مغوی بازیاب کرا لیا

  



کشمور(این این آئی)سندھ کے ضلع کشمور میں لوگوں کو فون پر نسوانی آواز کے ذریعے دوستی کے بعد اغوا کرنے والے ڈاکوؤں کے قبضے سے ایک مغوی بازیاب کرا لیا گیا جبکہ پولیس نے گروہ کا ایک رکن بھی گرفتار کر لیاہے,پولیس نے یہ کارروائی اس وقت کی جب وہ گروہ ایک نوجوان کو اپنے جال میں پھانس کر اغوا کر کے لے ساتھ لے جارہے تھے۔

کشمور پولیس کے مطابق بدھ اور جمعرات کی درمیانی شب ڈاکوؤں کے خلاف کارروائی کے نتیجے میں نوجوان کو باحفاظت اس صورت حال سے بچا لیا گیا اور گروہ کے سرغنہ کو مقابلے کے بعد پکڑ لیا گیا تاہم اس کے 5 ساتھی فرار ہونے میں کامیاب ہوگئے۔واقعے کی تفصیل کے مطابق کشمور کے رہائشی عبدالرزاق کھوسوکوکچھ عرصے سے فون پر ایک مرد لڑکی کی آواز میں کالز کرتا تھا۔ جب دوستی تھوڑی گہری ہوئی تو کالر نے عبدالرزاق سے ملنے کی فرمائش کی اور اسے کشمور ریلوے اسٹیشن کے پاس آنے کو کہا جہاں سے پروگرام کے مطابق اس(کالر)کا ایک باعتماد شخص عبدالرزاق کو مطلوبہ مقام پر لے آتا۔ایسے کیسز میں عام طور پر ہوتا یہ ہے کہ ڈاکو نسوانی آواز نکال کر یا اپنی کسی خاتون ساتھی سے فون کروا کر لوگوں سے دوستی کرلیتے ہیں اور پھر انہیں ملنے کے بہانے کچے کے علاقے یا کسی سنسان جگہ بلا کر تاوان کی وصولی کیلئے اغوا کرلیتے ہیں۔عبدالرزاق کے ساتھ بھی کچھ ایسا ہی ہوا وہ فون پر جگہ کا تعین ہونے پر وہاں پہنچ گیا جہاں ایک کار میں پہلے سے موجود ڈاکوؤں نے اسے اپنے ساتھ بٹھا لیا تاہم اس کی قسمت اچھی تھی کہ جب گروہ کے 6 ڈاکو اسے ساتھ لے جانے لگے تو مقامی ایس ایچ او زیاد علی نوناری اپنی ٹیم کے ہمراہ گشت پر تھے جنہوں نے مداخلت کی اور ان کے بقول اس دوران ڈاکوؤں سے مقابلہ بھی ہوا۔ اس نتیجے میں ایک ڈاکو محمد حیات سبزوئی زخمی حالت میں پکڑا گیا جبکہ تاریکی کا فائدہ اٹھا کر اس کے بقیہ 5 ساتھی فرار ہوگئے۔ اس طرح عبدالرزاق باحفاظت ان کے قبضے سے چھڑوالیا گیا۔پولیس کے مطابق کلاشنکوف اور گولیوں سمیت گرفتار ہونے والا زخمی ڈاکو سکندر سبزوئی گینگ نامی ایک بدنام گروہ کیلئے کام کرتا تھا اور اسے نسوانی آواز نکالنے میں بھی مہارت تھی جس کی مدد سے وہ لوگوں کو دوستی کے جال میں پھنسا کر مطلوبہ مقام پر بلا لیا کرتا تھا۔ گرفتار ملزم ڈکیتی و اغوا کے متعدد مقدمات میں بھی مطلوب تھا۔

مزید : علاقائی /سندھ /کشمور