حکومتی کارکردگی سوالیہ نشان ،حکومت کے دو اور وزراءمیں اختلاف شدت اختیار کر گیا

حکومتی کارکردگی سوالیہ نشان ،حکومت کے دو اور وزراءمیں اختلاف شدت اختیار کر ...
حکومتی کارکردگی سوالیہ نشان ،حکومت کے دو اور وزراءمیں اختلاف شدت اختیار کر گیا

  



اسلام آباد (ڈیلی پاکستان آن لائن )وزیراعلیٰ خیبرپختونخوا محمود خان اور سینئر وزیر عاطف خان کے درمیان اختلافات شدت اختیار کرگئے ہیں۔وزرا نے ناقص طرز حکمرانی پر شدید تحفظات کا اظہار کرتے ہوئے اپنے عہدوں سے مستعفی ہونے کی دھمکی دیدی ہے۔

نجی نیوز چینل جیو نیوز کے مطابق عاطف خان کے نامزد دو ارکان کو صوبائی اسمبلی کابینہ میں شامل نہ کرنے پر اختلافات سامنے آئے جبکہ اختلافات کی وجہ شہرام ترکئی سے محکمہ بلدیات کی وزارت واپس لینا بھی تھا۔وزیراعلیٰ سابق وزیر بلدیات شہرام ترکئی سے بی آر ٹی منصوبے پر ناراض تھے۔ سینئر وزیر عاطف خان نے ایم پی ایز کا الگ گروپ بنانے کے لیے کوششیں شروع کردی ہیں۔تحریک انصاف کے 20 ارکان پنجاب اسمبلی نے علیحدہ گروپ بنالیا۔ارکان نے حلف بھی لیا ہے کہ ایک دوسرے کے ساتھ رہیں گے اور مل کر مطالبات منوائیں گے۔

نجی نیوز چینل جیو نیو ز سے گفتگو کرتے ہوئے وزیراعلیٰ محمود خان نے کہا کہ کابینہ ممبران کے درمیان کوئی لڑائی نہیں ہے، اختلاف رائے جمہوریت کا حسن ہے، صوبائی حکومت کے پاس بہترین ٹیم ہے تمام وزراءپر مکمل اعتماد ہے۔دوسری جانب سینئر وزیر عاطف خان نے کہا کہ صوبے میں کرپشن اور اقربا پروری چل رہی ہے وہ اس کے ساتھ نہیں چل سکتے۔ وزیراعظم عمران خان واپس آئیں تو وہ ان سے ان مسائل پر بات کریں گے۔

مزید : قومی