کار سوار فیملی سے ڈکیتی کے دوران خاتون سے مبینہ زیادتی کا واقعہ نیا رُخ اختیار کرگیا

کار سوار فیملی سے ڈکیتی کے دوران خاتون سے مبینہ زیادتی کا واقعہ نیا رُخ ...
 کار سوار فیملی سے ڈکیتی کے دوران خاتون سے مبینہ زیادتی کا واقعہ نیا رُخ اختیار کرگیا

  

فیصل آباد (ویب ڈیسک) تاندلیانوالہ کے علاقہ میں چار ماہ قبل کار سوار فیملی سے ڈکیتی کے دوران خاتون سے مبینہ زیادتی کا واقعہ نیا رُخ اختیار کرگیا، متاثرہ خاندان نے خاتون سے جنسی زیادتی کا الزام واپس لیتے ہوئے کہا ہے بدسلوکی ہوئی جنسی زیادتی نہیں ہوئی جبکہ پولیس نے ابتدائی تحقیقات مکمل کرتے ہوئے مقدمے میں تاخیرکے حوالہ سے پولیس غفلت تسلیم کر لی ہے۔

سی پی او غلام مبشر میکن نے ایس پی انویسٹی گیشن کیپٹن (ر) محمد اجمل کے ہمراہ پریس کانفرنس کرتے ہوئے بتایا کہ مدعی مقدمہ ابرار احمد اور اسکی بیوی کے خود بیان لئے، دونوں نے کہا ہے کہ انہوں نے ڈکیتی کے دوران کھینچا تانی اور بدسلوکی کو زیادتی کہا تھا ۔ سی پی او نے کہا ملزمان دونوں میاں بیوی ان کے تین بچوں اور بھائی اسرار کو کار میں بٹھا کر عدنان نامی زمیندار کے ڈیرے پر لے کر گئے اور انہیں کار میں ہی محبوس رکھا، متاثرہ فیملی سے صرف ڈکیتی ہوئی ہے ۔ ڈیرے پر چھاپہ مار کرچار ملزمان کو گرفتار کرکے شناخت پریڈ کیلئے جیل بھیج دیا گیا ہے۔

مزید :

جرم و انصاف -