میئر کراچی، مسلم لیگ (ن) سندھ پیپلز پارٹی کو جماعت اسلامی کے قریب لانے کیلئے سرگرم

میئر کراچی، مسلم لیگ (ن) سندھ پیپلز پارٹی کو جماعت اسلامی کے قریب لانے کیلئے ...

  

      کراچی  (مانیٹرنگ ڈیسک) امیر جماعت کراچی حافظ نعیم الرحمن نے مسلم لیگ ن سندھ کے صدر شاہ محمد شاہ کی رہائش گاہ پر ان سے ملاقات کی ہے جس میں لیگی رہنما نے پیپلز پارٹی اور جماعت اسلامی کے درمیان جلد اتحاد کی اہمیت پر زور دیا ہے۔ملاقات میں حافظ نعیم الرحمان نے کہا کہ کراچی میں بلدیاتی انتخابات بڑی مشکل سے ہوئے ہیں، کچھ لوگ بلدیاتی انتخابات ملتوی کروانے کی کوشش میں تھے، کراچی کی ترقی کے لئے سب مل کر کام کریں، کراچی کی ترقی کے لئے متحد ہونا پڑے گا۔انہوں نے کہا کہ سیاسی جماعتیں متحد ہوں گی تو کراچی اور ملک ترقی کرے گا، کراچی کے بنیادی مسائل حل کرنے کی کوشش نہیں کی جا رہی، کراچی میں جس کا مینڈیٹ ہو اسے تسلیم کیا جانا چاہیے، ڈی آر اوز کی زیر نگرانی ووٹوں کی دوبارہ گنتی تسلیم نہیں کرتے۔اس موقع پر پاکستان مسلم لیگ (ن) سندھ کے صدر شاہ محمد شاہ کا کہنا تھا کہ جماعت اسلامی نے کراچی بلدیاتی انتخابات میں اچھی مہم چلائی، کراچی میں جماعت اسلامی نے بڑی کامیابی حاصل کی ہے۔انہوں نے مزید کہا کہ ن لیگ نے کراچی میں امن قائم کیا، چاہتے ہیں پیپلزپارٹی اور جماعت اسلامی کے درمیان جلد اتحاد قائم ہو جائے۔

حافظ نعیم

حیدر آباد(مانیٹرنگ ڈیسک) ایم کیو ایم پاکستان کے کنوینئر خالد مقبول صدیقی نے کہا ہے کہ ہم نے تمام دروازے کھٹکھٹا لئے، اب عوامی فیصلے ہوں گے، جلد عوام سڑکوں پر نکلیں گے۔حیدرآباد میں بلدیاتی انتخابات کے مکمل نتائج نہیں آئے، کراچی میں عوام نے ووٹ ڈالا پر کسی کے پاس پورا مینڈیٹ نہیں،حیدر آباد میں پریس کانفرنس کرتے ہوئے ایم کیو ایم پاکستان کے کنوینئر ڈاکٹر خالد مقبول صدیقی نے کہا ہے کہ تاریخ نے پچھلے دنوں ایسے بلدیاتی انتخابات کو دیکھا ہے جس کی نظیر نہیں ملتی، شہری آبادی کو کم سے کم دکھانے کی کوشش کی جاتی رہی ہے، 7 سال پہلے ہونے والی مردم شماری بھی غیر منصفانہ کی گئی، مہاجروں کی آبادی 25 فیصد بھی نہیں دکھائی جاتی رہی۔خالد مقبول صدیقی نے کہا کہ ماضی میں ثبوت ملنے کے باوجود بھی مردم شماری صحیح نہیں کی گئی، ایم کیو ایم نے انصاف کیلئے بہت زیادہ انتظار کر لیا، سپریم کورٹ کو ازخود نوٹس لینا چاہئے تھا،  کنوینئر ایم کیو ایم پاکستان نے کہا کہ حقیقی جدوجہد کیلئے ہم سب ایک ہو چکے ہیں،ہمیشہ ہماری آواز میں رکاوٹ ڈالی جاتی ہے، ، لیاقت آباد کے دکاندار پورے لاہور سے زیادہ ٹیکس دیتے ہیں، ایم کیو ایم نے پی ٹی آئی کو غیر سنجیدگی کی وجہ سے چھوڑا، ایوان اور اقتدار ہماری ٹھوکروں پر رہا ہے۔اس موقع پر گفتگو کرتے ہوئے مصطفیٰ کمال نے کہا کہ ایم کیو ایم نے 70 یوسی کم گننے کی بات کی، سندھ حکومت نے 53 یونین کمیٹیز پر تو مان لیا، 53 یونین کونسلز کراچی کی شامل کرو اگر وہ شامل ہو گئیں تو باہر رہ کر بھی الیکشن جیت گئے، یہ سندھ حکومت کا رویہ اور دھاندلی ہے، ابھی تو معاملہ شروع ہوا ہے۔

انہوں نے کہا کہ اگر دھرنے اور احتجاج ہی کرنے ہیں تو پھر آپ جلد دیکھ لیں گے، آپ سمجھتے ہیں کہ میئر بنا لیں گے اور ہم خاموش بیٹھ جائیں گے تو یہ آپ کی بھول ہے، مصطفی کمال نے مزید کہا کہ بڑا کمال کر لیا آپ نے، ہم نے بائیکاٹ کیا آپ کا مئیر آگیا کیا سب اچھا ہو جائے گا؟ ہم مانیں گے نہیں، اپنا حق لیں گے آئینی طریقے سے، میں ریاست کے تمام ستونوں کو کہتا ہوں ہوش کے ناخن لو ہم نے پاکستان کو چلانے کیلئے قربانیاں دی ہیں، وسیم اختر کا کہنا تھا کہ پیپلزپارٹی کے دیہی علاقے ملا کر حیدر آباد میں کامیابی حاصل کی ہے، پیپلزپارٹی کا 71 کے بعد جو کردار رہا ہے اس پر شہری علاقوں سے ووٹ نہیں ڈالیں گے۔

خالد مقبو صدیقی

مزید :

صفحہ اول -