انسداد دہشتگردی عدالت نے نقیب اللہ قتل کیس کا محفوظ فیصلہ سنا دیا

انسداد دہشتگردی عدالت نے نقیب اللہ قتل کیس کا محفوظ فیصلہ سنا دیا
انسداد دہشتگردی عدالت نے نقیب اللہ قتل کیس کا محفوظ فیصلہ سنا دیا

  

کراچی(ڈیلی پاکستان آن لائن)انسداد دہشتگردی عدالت نے 5 سال بعد نقیب اللہ قتل کیس کا محفوظ فیصلہ سنا دیا۔

نجی ٹی وی چینل "جیو نیوز" کے مطابق عدالت نے محفوظ فیصلہ سناتے ہوئے مرکزی ملزم سابق ایس ایس ملیر راﺅا نوار سمیت تمام ملزمان کو بری کردیا،عدالت نے کہاکہ پراسیکیوشن ملزمان کیخلاف الزام ثابت کرنے میں ناکام رہی ۔

یاد رہے کہ عدالت نے فریقین کے دلائل مکمل ہونے پر 14 جنوری کو فیصلہ محفوظ کیا تھا،مقدمے میں 51 گواہوں کے بیانات قلمبند کئے گئے،نقیب اللہ قتل کیس کا مقدمہ 23 جنوری 2018 کو درج کیا گیاتھا،مقدمے کے چالان میں 90 سے زائد گواہوں کو شامل کیا گیاتھا، پراسیکیوشن کے 7 گواہ پولیس کو دیئے گئے بیانات سے منحرف ہو گئے تھے ۔

مزید :

علاقائی -سندھ -کراچی -Breaking News -اہم خبریں -