باہمی احترام اور اعتماد کی پالیسی پر چلنے سے ہی پاک امریکہ تعاون بحال ہو سکتا ہے :نواز شریف

باہمی احترام اور اعتماد کی پالیسی پر چلنے سے ہی پاک امریکہ تعاون بحال ہو سکتا ...

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app


اسلام آباد( این این آئی) پاکستان مسلم لیگ (ن) کے صدر محمد نواز شریف سے امریکہ کے سبکدوش ہونےوالے سفیر کیمرون منٹر نے پنجاب ہاﺅس میں ملاقات کی جس میں پاک امریکہ تعلقات ‘ دہشتگردی کےخلاف جاری جنگ ‘ نیٹو سپلائی کی بحالی‘ خطے کی مجموعی صورتحال سمیت دیگر امور پر تفصیلی تبادلہ خیال کیا گیا۔ ملاقات میں امریکی سفیر کی اہلیہ ‘ سینیٹ میں قائد حزب اختلاف اسحاق ڈار اور انوشہ رحمان بھی موجود تھے ۔ نواز شریف نے ملاقات میں اپنے اس مو¿قف کو دہرایا کہ امریکہ باہمی احترام ور باہمی اعتماد کی پالیسی پر عمل کرے اور اس پر عمل پیرا ہو نے سے پاک امریکہ تعاون بحال ہو سکتا ہے ۔ ایسی پالیسی سے ہی خطے میں امن اور استحکام کا مقصد حاصل ہو سکتا ہے ۔ انہوں نے کہا کہ امریکہ پاکستان کے حوالے سے اپنی پالیسی پر نظر ثانی کر ے۔ امریکی پالیسی ایسی ہونی چاہیے جس سے پاکستان میں جمہوری ادارے مضبوط ہوں اور پاکستان کی معیشت غیر ملکی امداد پر کم سے کم انحصار کرے۔ نوازشریف نے سبکدوش ہونےوالے امریکی سفیر کی پاکستان میں تعیناتی کے دوران خدمات کو سراہا ۔ کیمرون منٹر نے کہا کہ پاکستان میں جمہوریت صحیح سمت گامزن ہے اور پاکستان میں ہونےوالی تبدیلیوں سے پر اعتماد ہوں۔ دریں اثناءنجی ٹی وی چینل سے گفتگو کرتے ہوئے سبکدوش ہونےوالے سفیر کیمرون منٹر نے کہاکہ نواز شریف اور عمران خان امریکہ سے اچھے تعلقات چاہتے ہیں جبکہ وہ مولانافضل الرحمان سے متاثر ہیں ۔انہوںنے کہا کہ جمہوری اداروں کو فوج کےساتھ مل کر کام کرنے کی ضرورت ہے تاہم پارلیمنٹ ، عدلیہ اور ایگزیکٹو کا ملٹری کے ساتھ کام آسان نہیں اس میں وقت لگے گا۔انہوںنے مزید کہا کہ سفارتکار ہوںاور ہمیشہ سچ بولتا ہوں ‘پاکستان کے سیاستدانوں سے متاثر ہوں خصوصاًمولانا فضل الرحمان کی شخصیت متاثر کن ہے ۔

مزید :

صفحہ اول -