مضبوط پاکستان ہی کشمیریوں کا بہترین وکیل ہوگا:راجہ فاروق

مضبوط پاکستان ہی کشمیریوں کا بہترین وکیل ہوگا:راجہ فاروق

  

اسلام آباد(این این آئی) آزادجموں وکشمیر کے وزیراعظم راجہ محمد فاروق حیدر خان نے کہا ہے کہ کشمیر پر یورپی پارلیمنٹ کی نئی دستاویز نے ایک طرف بھارت کی جانب سے انسانی حقوق کی سنگین خلاف ورزیوں کو اجاگر کیا ہے جبکہ دوسری جانب عالمی برادری کے ضمیر کو جگانے کی کوشش کی ہے۔مسئلہ کشمیر پر جو نیا ارتعاش پیدا ہو رہا ہے اس سے کشمیریوں کو امید پیدا ہوئی ہے۔پاکستان میں سیاسی سیٹ اپ کو عوام کی خواہشات کے مطابق مکمل ہونے دیا جائے تاکہ نئی منتخب حکومت کشمیر پر ہونے والی پیشرفت کو مزید آگے بڑھا سکے۔سیاسی اور معاشی طور پر مضبوط پاکستان ہی کشمیریوں کا بہترین وکیل ثابت ہو سکتا ہے۔سید علی رضا کو یورپی پارلیمنٹ میں کشمیر پر جاندار کام کرنے پر سراہتا ہوں۔وزیراعظم نے ان خیالات کا اظہار یورپی پارلیمنٹ میں کشمیر پر جاری ہونے والی نئی دستاویز پر اپنے ردعمل کا اظہار کرتے ہوے کیا۔راجہ محمد فاروق حیدر خان نے کہا کہ یورپین پارلیمنٹ کی جانب سے کشمیر کے حوالے سے جاری ہونے والی رپورٹ ایک انتہائی مثبت پیشرفت ہے۔انہوں نے کہا کہ پہلے اقوام متحدہ کے انسانی حقوق کمیشن نے مقبوضہ کشمیر میں۔بھارتی فوج کے مظالم اور انسانی حقوق کی سنگین خلاف ورزیوں کو اجاگر کیا اور اب یورپی پارلیمنٹ نے ایک دستاویز کی شکل میں اس پر مہر تصدیق ثبت کی ہے۔انہوں نے کہا کہ حالیہ دونوں واقعات سے کشمیریوں کو ایک امید ہوئی ہے کہ یورپ اور اہل مغرب میں کشمیریوں کا مقدمہ اہمیت اختیار کر رہا ہے۔انہوں نے کہا ایسے وقت میں پاکستان میں ایک مضبوط سیاسی حکومت کی ضرورت ہے جو حالیہ پیشرفت کو آگے بڑھا سکے۔

راجہ فاروق حیدر

مزید :

علاقائی -