25جولائی کو مسلم لیگ (ن) کا سورج طلوع ہو گا : شہباز شریف

25جولائی کو مسلم لیگ (ن) کا سورج طلوع ہو گا : شہباز شریف

  

لاہور،ملتان(مانیٹرنگ ڈیسک،این این آئی)مسلم لیگ (ن)کے صدر شہباز شریف کا کہنا ہے کہ عوام کووسائل مہیا کرنے کیلئے ضروری ہے کرپشن اورلوٹ کھسوٹ کاخاتمہ ہو،ملک میں غربت کے خاتمے کیلئے لوٹ کھسوٹ کاخاتمہ ضروری ہے اورمعاشی آزادی کے حصول تک دنیاہمیں عزت کی نگاہ سے نہیں دیکھے گی،26جولائی کو مسلم لیگ (ن) کا سورج طلو ع ہوگا۔میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے مسلم لیگ (ن)کے صدر شہباز شریف کا کہنا تھا کہ نوازشریف سے ان کا کریڈٹ کوئی نہیں چھین سکتا،نوازشریف نے ملک کوایٹمی طاقت بنایا،لوڈشیڈنگ ختم کی،سی پیک اورموٹرویز بنائے۔شہباز شریف کا مزید کہنا تھا کہ اگر آج ہم صحیح راہ متعین نہ کرسکے تو تاریخ ہمیں معاف نہیں کریگی،میں نے عوام کی خدمت کے لئے اپنا خون پسینہ بہایا ہے،میری خواہش ہے کہ وطنِ پاک کیلئے جو کرسکوں کرجاؤں۔پارٹی کے مرکزی سیکرٹریٹ ماڈل ٹاؤن میں مختلف مسالک کے علما ئے کرام سے مشاورتی اجلاس کے دوران گفتگو کرتے ہوئے انہوں نے کہاکہ میں اپنے والد میاں شریف مرحوم کے ساتھ علما ء کی محفلوں میں بیٹھتا اور سیکھتا رہا۔ انہوں نے کہا کہ ہمیں سوچنا چاہیے کہ کیا وجہ ہے کہ ہمارا ملک آگے جانے کی بجائے پیچھے رہ گیا۔بنگلہ دیش جو مشرقی پاکستان اور ہمارے دل کا ٹکڑا تھامعاشی طور پر پاکستان سے زیادہ مضبوط ہو گیا ہے۔ترکی کی مثال ہمارے سامنے ہے ،ترکی نے اسرائیل کا ناطقہ بند کر دیا ہے ۔پاکستان کے قیام کا مقصد سامراج اور ہندو کی غلامی سے نجات حاصل کر کے عدل کا نظام قائم کرنا تھا۔پاکستان کے قیام کا مقصد اسلامی فلاحی معاشرے کا قیام تھا۔خدائے بزرگ و برتر کی قسم حکومت میرا مطمع نظر نہیں،میری ایک ہی خواہش اور جستجو ہے کہ وطن پاک کے لئے جو کر سکوں کر جاؤں۔ میں نے عوام کی خدمت کیلئے اپنا خون پسینہ بہایا ہے،آج ہم صحیح راہ نہ متعین کر سکے تو تاریخ ہمیں معاف نہیں کرے گی۔انہوں نے کہا کہ آج ہم معاشی طور پر آزاد نہیں،معاشی آزادی کے حصول تک دنیا ہمیں عزت کی نگاہ سے نہیں دیکھے گی۔اس ملک میں غربت کے خاتمے کیلئے لوٹ کھسوٹ کا خاتمہ ضروری ہے۔عوام کو وسائل مہیا کرنے کے لئے ضروری ہے کہ کرپشن اور لوٹ کھسوٹ کا خاتمہ ہو۔ختم نبوت پر جس کا ایمان نہیں وہ مسلمان نہیں ۔ متنازعہ قانون کے مسودے میں کردار ادا کرنے والے دیگر جماعتوں کے ارکان کو انتخابی ٹکٹ دئیے گئے ہمیں کسی کے حوالے سے شائبہ بھی ہوا تو ٹکٹ نہیں دیا ۔اس موقع پر علماء کرام نے شہباز شریف کی مکمل حمایت کا اعلان کرتے ہوئے کہا کہ وہ 25 جولائی کے الیکشن میں ن لیگ کے امیدواروں کو ووٹ دینگے شہباز شریف نے اپنے خطاب میں کہا کہ نواز شریف کو ملک کو ترقی کی راہوں پر گامزن کرنے اور ایٹمی دھماکے کرنے کی پاداش میں سزا سنائی گئی ہے انہوں نے کہا کہ ملک میں دو قسم کے قانون چل رہے ہیں عدالتوں کی جانب سے لاڈلے کیلئے الگ قانون ہے اور اسے مکمل چھٹی دی گئی ہے جبکہ ن لیگ کیخلاف انتقامی کارروائیوں کا سلسلہ جاری ہے اور ہمارے امیدواروں کو باری باری مختلف ناجائز مقدمات میں ملوث کر کے سزائیں دی جارہی ہیں ۔نجی نیوز چینل جیو نیوز کے پروگرام ’کیپٹل ٹاک‘میں میزبان حامد میر سے گفتگو کرتے ہوئے انہوں نے بتا یا کہ جیل میں ایک دن مجھے بخار ہو گیا لیکن میں ڈاکٹر سے ملاقات نہیں کرنے دی جا رہی تھی تو پھر میں نے اپنے سیل کے دروازے کو زور زور سے ٹانگیں مارنا شروع کردیں ،اس پر اہلکار فوری میرے سیل کے سامنے آئے اور پھر وہاں پر اچھا خاصا ہنگامہ ہوا۔شہباز شریف نے کہا کہ میری یاداشت سے یہ چیزیں جا چکی ہیں کیونکہ ہمیں سب کو مل کر پاکستان کے مفاد میں سوچنا چاہیے۔ان کا کہنا تھا کہ مجھے بتا یا گیا کہ نواز شریف کو کمپاؤنڈ والے سیل میں رکھا گیا اور انہیں پہلی رات زمین پر سلا یا گیا اس پر نواز شریف نے جیل انتظامیہ سے کہا کہ میں تین بار وزیراعظم بنا ہوں میں کوئی دہشت گرد نہیں ،میں نے ملک کی خدمت کی ہے ،مجھے زمین پر کیوں سلا رہے ہو اس پر جیل انتظامیہ نے کہا کہ آج بیڈ نہیں ہے۔اس موقع پر حامد میر نے سوال کیا کہ آپ نے اڈیالہ جیل کو اپنے دور حکومت میں کیا سہولیات دیں ؟اس پر جواب دیتے ہوئے شہباز شریف نے کہا کہ ہم نے اڈیالہ جیل میں بے پناہ سہولیات دیں ،نئی تعمیرات کیں ،دہشت گردی کو مد نظر رکھتے ہوئے کیمرے لگوائے ،اڈیالہ جیل میں سہولیات کا فقدان نہیں بلکہ یہ جیل انتظامیہ اور نگران حکومت کی گری ہوئی سوچ کی عکاسی ہے۔مسلم لیگ ن کے صدر شہباز شریف کا کہنا ہے کہ اگر الیکشن میں دھاندلی ہوئی تو پھر عوامی سیلاب کو نہیں روک سکوں گا۔ملتان سے جلسے سے خطاب کرتے ہوئے شہباز شریف کا کہنا تھا کہ صوبائی انتظامیہ، پولیس اور الیکشن کمیشن کان کھول کر سن لیں کہ ووٹرز کو روکا تو پورا پاکستان ہو گا اور صوبائی انتظامیہ، پولیس اور الیکشن کمیشن ہو گا۔انہوں نے کہا کہ پہلے بھی جیلیں اور ہتھکڑیاں برداشت کی ہیں، عوامی سیلاب کے آگے میں گولی کھاؤں گا لیکن آپ کا ووٹ محفوظ کروں گا۔شہباز شریف نے کہا کہ پاکستان کو ایٹمی طاقت بنانے والے نواز شریف کے ساتھ ایسا سلوک ہو رہا ہے جیسے انہوں نے ملک سے دشمنی کی ہے، دوسری جانب فریال تالپور اور آصف زرداری کو کہا گیا کہ الیکشن کے بعد دیکھیں گے۔ان کا کہنا تھا کہ حنیف عباسی کے خلاف رات 12 بجے کے قریب فیصلہ دیا گیا، الیکشن کمیشن نے ان کے حلقے میں انتخابات ملتوی کر کے اچھا کیا لیکن سب کو الیکشن کے بعد کی تاریخ مل گئی اور حنیف عباسی کو جکڑ دیا گیا۔انہوں نے کہا کہ شیخ رشید کو پتہ چل گیا تھا کہ حنیف عباسی 70 ہزار سے شکست دے گا اس لیے انہیں عدالت کا سہارا لینا پڑ گیا۔صدر مسلم لیگ ن کا کہنا تھا کہ ووٹ کی پرچی سے نواز شریف، مریم نواز اور حنیف عباسی کو جیل سے نکالیں گے۔شہباز شریف نے چیئرمین تحریک انصاف عمران خان کو بھی تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے کہا کہ الزام خان نے پشاور میٹرو پر 40 ارب روپے برباد کر دیے لیکن ملتان کی میٹروبس آپ کے لیے تحفہ ہے۔

مزید :

صفحہ اول -