حنیف عباسی کی نااہلی ، این اے 60میں انتخابات مؤخر

حنیف عباسی کی نااہلی ، این اے 60میں انتخابات مؤخر

  

اسلام آباد(سٹاف رپورٹر ، مانیٹرنگ ڈیسک ) الیکشن کمیشن نے عدالت سے سزا یافتہ مسلم لیگ (ن) کے امیدوار حنیف عباسی کی نااہلی کے بعد این اے 60 راولپنڈی میں انتخابات مؤخر کردیئے۔انسداد منشیات کی عدالت نے مسلم لیگ (ن) کے امیدوار حنیف عباسی کو ایفیڈرین کیس میں عمر قید کی سزا سنائی تھی جس کے بعد انہیں کمرہ عدالت سے گرفتار کرتے ہوئے اڈیالہ جیل منتقل کیا گیا تھا۔قومی اسمبلی کی نشست این اے 60 راولپنڈی سے حنیف عباسی عوامی مسلم لیگ کے سربراہ شیخ رشید کے مدمقابل تھے جن کی نااہلی کے بعد الیکشن کمیشن نے اس نشست پر انتخابات مؤخر کردیئے ہیں۔الیکشن کمیشن کے مطابق حلقے میں دوبارہ الیکشن کے شیڈول کااعلان بعد میں کیا جائے گا۔الیکشن کمیشن کا کہنا ہے کہ ایک امیدوار کے الیکشن سے باہر ہونے پر تمام جماعتوں کو یکساں مواقع نہیں مل رہے۔یاد رہے کہ نئی حلقہ بندیوں سے قبل یہ نشست این اے 56 راولپنڈی سیون تھی جس پر گزشتہ انتخابات میں تحریک انصاف کے چیئرمین عمران خان نے کامیابی حاصل کی تھی۔ اسی نشست پر حنیف عباسی 2008 کے انتخابات میں مسلم لیگ (ن) اور 2002 کے ضمنی انتخابات میں متحدہ مجلس عمل کے ٹکٹ پر کامیاب ہوئے تھے۔ انسداد منشیات عدالت تحریری فیصلہ بھی جاری کر دیا ہے۔ دریں اثنا پولیس نے حنیف عباسی کے بیٹے سمیت 60 سے زائد (ن) لیگی رہنماؤں کے خلاف کار سرکار میں مداخلت اور عدالت میں توڑ پھوڑ کرنے کے الزام میں مقدمہ درج کرلیا ہے۔پولیس کے مطابق ایف آئی آر میں حنیف عباسی کے بیٹے حماد عباسی، سابق ایم پی اے ضیاء4 اللہ شاہ، راجہ عثمان، فیضان شاہ، شوکت عباسی، عابد عباسی اور مسلم لیگ (ن) کے کارکنوں سمیت 50 نامعلوم افراد کو بھی نامزد کیا گیا ہے۔واضح رہے کہ گزشتہ روز حنیف عباسی کی گرفتاری پر وہاں موجود مسلم لیگ (ن) کے رہنماؤں اور کارکنوں نے نعرے بازی شروع کردی تھی جب کہ اس موقع پر عدالت میں توڑ پھوڑ بھی کی گئی۔حنیف عباسی کو انسدادہشت گردی کے ملزموں کے بیرک میں رکھا گیا ہے،لیگی رہنما آج پیر کو وکلاء سے ملاقات کے بعد ہائی کورٹ میں کیس کے خلاف اپیل دائر کرینگے۔

حنیف عباسی

راولپنڈی ( آن لائن)مسلم لیگ ن راولپنڈی نے قومی اسمبلی کے حلقہ این اے 60سے مسلم لیگ ن کے امیدوار محمد حنیف عباسی کے خلاف ایفی درین کوٹہ کیس میں انسداد منشیات کی عدالت کے فیصلے کے بعد الیکشن کمیشن کی جانب سے انتخابات موخرکرنے کے فیصلے کے بعد احتجاج کا پروگرام منسوخ کر دیا مسلم لیگ ن کی قیادت نے الیکشن کمیشن کے فیصلے کا خیر مقدم کرتے ہوئے کہا کہ حنیف عباسی کی حلقے میں جیت یقینی تھی لیکن عدالتی فیصلے سے یہاں یکطرفہ الیکشن واضح ہو گیا تھا لیکن الیکشن کمیشن کے فیصلے سے مسلم لیگ ن کو اپنی نشست کے دفاع کا پورا موقع ملے گا قبل ازیں اتوار کے روز شہر بھر سے مسلم لیگی کارکنان جلوسوں اور ٹولیوں کی شکل میں مری روڈ پر نکل آئے جہاں پر یہ جلوس ایک بڑی ریلی کی شکل اختیارکر گئے طے شدہ پروگرام کے مطابق مسلم لیگی کارکنون نے ریلی کی شکل میں رات گئے تک پورے شہر کا گشت کرنا تھا ریلی کے شرکا نے ہاتھوں میں سیاہ پرچم اٹھا رکھے تھے جبکہ شرکا مسلم لیگ ن ، نواز شریف ، مریم نوازاورحنیف عباسی کے حق میں نعرے لگا رہے تھے تاہم ریلی کمیٹی چوک پر پہنچی ہی تھی کہ الیکشن کمیشن کی جانب سے این اے60کے انتخابات ملتوی ہونے کے نوٹیفکیشن کی اطلاع ملتے ہی ریلی منسوخ کر دی گئی اور کارکنان نے الیکشن کمیشن کے فیصلے کا خیر مقدم کرتے ہوئے الیکشن کمیشن کے حق میں نعرہ بازی کی این اے 60 کا الیکشن ملتوی کرنے کے الیکشن کمیشن کے فیصلے پر ن لیگی کارکنوں کے مری روڈ پر بھنگڑے الیکشن کمیشن نے حق اور سچ کا فیصلہ کیا ادھر ریلی سے قبل اتوار کے روزسینیٹر چوہدری تنویر نے حنیف عباسی کے الیکشن آفس میں پریس کانفرنس کرتے ہوئے کہا کہ حنیف عباسی کے جیل جانے کے باعث این اے 60 میں مسلم لیگ ن کا نیاامیدوارحنیف عباسی کے خاندان سے ہی ہو گاجس کا اعلان باہمی مشاورت کے بعد کیا جائے گا مخالفت دوسری طرف پاکستان پیپلز پارٹی کے سیکرٹری جنرل نئیر حسین بخاری نے حلقہ این اے 60راولپنڈی الیکشن ملتوی ہونے پر احتجاج کیا۔ انہوں نے کہا کہ الیکشن کمیشن نے اپنے اختیارات سے تجاوز کیا ۔ کسی امیدوار انتقال کے سواحلقے سے الیکشن ملتوی نہیں کیا جاسکتا۔ ،مریم نواز اور کیپٹن صفدر کے حلقوں سے الیکشن ملتوی کیوں نہ ہوئے۔ اس فیصلے کے خلاف اعلیٰ عدلیہ سے رجوع کریں گے۔ جبکہ عوامی مسلم لیگ کے سربراہ شیخ رشید احمد نے راولپنڈی کے حلقہ این اے 60کے انتخابات ملتوی کرنے کے الیکشن کمیشن کے فیصلے کی مخالفت کرتے ہوئے کہا ہے کہ اگر الیکشن کمیشن نے آئینی کام کیا ہے تو (آج) پیر کو ہائیکورٹ میں آکر بتائے ۔چیف جسٹس آف پاکستان سے الیکشن ملتوی کرنے کا نوٹس لینے کی اپیل کرتا ہوں ۔اتوار کو میڈیا سے بات چیت کرتے ہوئے شیخ رشید احمد نے کہا کہ راولپنڈی کے حلقہ این اے 60کے میرے مخالف لیگی امیدوار حنیف عباسی کو ایفی ڈرین کوٹہ کیس میں سزاہوئی ہے الیکشن کمیشن کو حلقے میں الیکشن ملتوی نہیں کرنے چاہئیں تھے ۔انہوں نے کہا کہ حنیف عباسی جمہوریت کے قیدی نہیں ،انہیں منشیات کے مقدمے میں قید ہوئی ۔شیخ رشید نے کہا کہ مجھے اور عمران خان کو الیکشن میں ہرانے کی سازش ہور ہی ہے ۔شیخ رشید نے کہا کہ اگر الیکشن کمیشن آف پاکستان نے آئینی کام کیا ہے تو (آج) پیر کو ہائیکورٹ میں آکر بتائے ۔

مزید :

صفحہ اول -