اسحاق ڈارکیخلاف نیب ضمنی ریفرنس: فریقین کے دلائل مکمل،شریک ملزمان کی درخواست بریت پرفیصلہ محفوظ

اسحاق ڈارکیخلاف نیب ضمنی ریفرنس: فریقین کے دلائل مکمل،شریک ملزمان کی ...
اسحاق ڈارکیخلاف نیب ضمنی ریفرنس: فریقین کے دلائل مکمل،شریک ملزمان کی درخواست بریت پرفیصلہ محفوظ

  

اسلام آباد(ڈیلی پاکستان آن لائن) اسحاق ڈارکیخلاف نیب ضمنی ریفرنس کیس کی سماعت میں احتساب عدالت نے فریقین کے دلائل مکمل ہونے پرشریک ملزمان کی درخواست بریت پرفیصلہ محفوظ کرتے ہوئے کیس کی مزیدسماعت27 جولائی تک ملتوی کر دی۔

تفصیلات کے مطابق اسحاق ڈارکیخلاف نیب ضمنی ریفرنس کی سماعت احتساب عدالت میں ہوئی ۔اس موقع پر شریک ملزمان نعیم محمود،منصوررضاعدالت میں پیش ہوئے اور وکیل صفائی نے 2 ملزمان کی بریت کی درخواست پردلائل دیئے ۔وکیل صفائی قاضی مصباح نے موقف اپنایا کہ دونوں ملزمان پرنیب کاچارج نہیں لگ سکتا،استغاثہ کے پیش کردہ شواہدناکافی ہیں،حدیبہ پیپرملز سے متعلق نیب نے کام نہیں کیاجبکہ نیب کی جانب سے ضمنی ریفرنس 7والیم پر مشتمل تھا۔ نیب پراسیکیوٹرعمران شفیق نے احتساب عدالت میں دلائل دیتے ہوئے موقف اپنایا کہ ملزمان کوثابت کرناہوگایہ اکاؤنٹس حدیبیہ پیپرمل دورکے ہیں، دورایک ہوسکتا ہے،جرم ایک نہیں،حدیبیہ پیپرمل ایک کمپنی ہے،چارٹ میں کمپنی کانام کہیں نہیں،پناماکیس میں الگ الگ جرم ہیں اورالگ الگ سزاہوئی،جن اکاؤنٹس کی تفصیلات وکیل صفائی نے پیش کیں ہماراریفرنس اس پرنہیں ہے ۔ احتساب عدالت نے فریقین کے دلائل مکمل ہونے پرشریک ملزمان کی درخواست بریت پرفیصلہ محفوظ کر لیا جو 27 جولائی کو سنایاجائے گا۔جس پر عدالت نے کیس کی مزیدسماعت27 جولائی تک ملتوی کر دی۔

مزید :

علاقائی -اسلام آباد -