پاکستان بزنس سنٹر کویت کے زیر اہتمام پاکستانی کمیونٹی کیلئے فری میڈیکل کیمپ کا انتہائی کامیاب انعقاد

پاکستان بزنس سنٹر کویت کے زیر اہتمام پاکستانی کمیونٹی کیلئے فری میڈیکل کیمپ ...
پاکستان بزنس سنٹر کویت کے زیر اہتمام پاکستانی کمیونٹی کیلئے فری میڈیکل کیمپ کا انتہائی کامیاب انعقاد

  

کویت( محمد عرفان شفیق )   پاکستان بزنس سنٹر کویت کے زیر اہتمام    فروانیہ کے مرکز بدرالسماء الطبی میں فری میڈیکل کیمپ کا انعقاد کیا گیا جو انتہائی کامیاب رہا۔یہ کیمپ صرف پاکستانی کمیونٹی کیلئے مخصوص کیا گیا تھا ۔کیمپ کے لیے صبح 7:00 بجے کا وقت مختص کیا گیا تھا تاہم شرکاء بہت پہلے سے ہی کلینک میں پہنچنا شروع ہو گئے تھے۔کیمپ میں نظم وضبط برقرار رکھنے اور کسی بھی بدنظمی سے بچنے کیلئے شرکاء کو پہلے سے ہی آن لائن رجسٹریشن کی ہدایت کی گئی تھی،اس کے باوجود متعدد پاکستانی کلینک پہنچ گئے،حافظ محمد شبیر ڈائریکٹر پاکستان بزنس سنٹر وڈائریکٹر پاکستان ٹوورازم برائے کویت نے اس موقع پر میڈیا کو بتایا کہ بغیر رجسٹریشن کے آنے والوں سے التماس ہے کہ وہ تشریف رکھیں اور اگر رجسٹرڈ افراد میں سے اگر کوئی مصروفیات ہونے کی وجہ سے نہیں آسکتا اور کچھ جگہ بنتی ہے تو انہیں ضرور موقع دیا جائے گا ورنہ انہیں اگلے میڈیکل کیمپ کیلئے رجسٹر کر لیا جائے گا جو جمعہ 27 جولائی کو منعقد ہو گا،انہوں نے کہا کہ مجموعی طور پر چار فری میڈیکل کیمپس اسی جگہ پر لگائے جائیں گے جو ہر جمعہ کو منعقد ہونگے،آخری کیمپ 10,اگست کو لگایا جائے گا،انہوں نے خواہشمند افراد کو ہدایت کی کہ وہ پاکستان بزنس سنٹرکے اس وٹس نمبر 94027079 خود کو رجسٹرڈ کرا لیں اور نمبر حاصل کر لیں تاکہ انہیں کسی پریشانی کا سامنا نہ کرنا پڑے، فری میڈیکل کیمپ میں بلڈ پریشر ہیپاٹائٹس،بلڈ شوگر اورکولیسٹرول کے فری ٹیسٹ کی سہولت موجود تھی،اس کے علاوہ کولیسٹرول اور گردوں کے ٹیسٹ کی سہولت بھی موجود تھی۔

کیمپ میں شریک سید علی نے میڈیا کو بتایا کہ ان کے گردہ میں پتھری کی شکایت ہے جس کیلئے وہ یہاں آئے ہیں اور اپنی باری کا انتظار کر رہے ہیں۔  وہ حافظ محمد شبیر اور پاکستان بزنس سنٹر کی ٹیم کے شکر گزار ہیں جنہوں نے انہیں یہ سہولت فراہم کی۔اکبر علی محمد کا تعلق اسکردو سے ہے وہ بھی کیمپ میں شریک ہوئے،انہوں نے بتایا کہ انہیں شوگر ہے وہ سینے میں درد محسوس کرتے ہیں،انہوں نے خود کوپہلے سے رجسٹرڈ کرایا تھا،وہ چیک اپ کرا چکے ہیں،  لیبارٹری ٹیسٹ کیلئے انتظار کر رہے ہیں،وہ اس سے پہلے سرکاری کلینک میں جا چکے ہیں جہاں انہیں زبان کا بھی مسئلہ تھا،یہاں کیمپ میں یہ سہولت بھی موجود ہے کہ ڈاکٹر حضرات ہماری زبان سمجھتے ہیں۔

کیمپ میں شریک ایک پاکستانی خاتون عذرا امجد نے بتایا کہ انہیں کولیسٹرول کی شکایت تھی،یہاں آکر ٹیسٹ کرانے سے پتہ چلا کہ انہیں شوگر بھی ہے کاش وہ پہلے سے ٹیسٹ کروا لیتی تو شوگر کو بروقت کنٹرول کرلیتی،وہ اپنے ہم وطن مرد و خواتین کو مشورہ دیں گی کہ پاکستان بزنس سنٹر کویت کے زیر اہتمام فری میڈیکل کیمپس سے پوری طرح فائدہ اٹھائیں اور تمام بیماریوں کے ٹیسٹ کرا کے تسلی کر لیں کہ وہ ان تمام بیماریوں سے محفوظ ہیں۔ کیمپ میں شریک ایک اور خاتون آمنہ مجتبیٰ نے بتایا کہ ان کا تعلق لاہور سے ہے،وہ کافی عرصہ سے گردوں کے عارضہ میں مبتلا ہیں،وہ سرکاری اسپتال کے علاوہ پرائیویٹ کلینک سے بھی علاج کرا چکی ہیں،فری میڈیکل کیمپس کا انعقاد پاکستانی کمیونٹی کیلئے بڑی خدمت ہے جہاں انہیں ایک پیسہ بھی خرچ کئے بغیر چیک اپ کی سہولتیں موجود ہیں،اس کے علاوہ لیبارٹری ٹیسٹ کی سہولت بھی دستیاب ہے۔حافظ محمد شبیر،ڈائریکٹر پاکستان بزنس سنٹر ازخود تمام انتظامات کی نگرانی کرتے رہے،  اس موقع پر پاکستان بزنس سنٹر کی ٹیم کے ارکان راجہ ظفر سینئر منیجراور دیگر ٹیم بھی مریضوں کی رہنمائی کیلئے بڑے مستعد نظر آئے،  وہ پرچی کے حصول سے لے کر لیبارٹری ٹیسٹ تک ان کی رہنمائی کرتے رہے ۔ اس موقع پر میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ سوشل میڈیا پر لگائی جانے والی پوسٹ میں وٹس اپ نمبر دیا گیا ہے اس پر اپنا نام اور ٹیلی فون نمبر درج کرا دیں ۔

مزید :

عرب دنیا -