سعودی عرب نے ملک میں مقیم غیر ملکی ملازمین کو خوشخبری سنادی، بڑا مسئلہ حل ہوگیا

سعودی عرب نے ملک میں مقیم غیر ملکی ملازمین کو خوشخبری سنادی، بڑا مسئلہ حل ...
سعودی عرب نے ملک میں مقیم غیر ملکی ملازمین کو خوشخبری سنادی، بڑا مسئلہ حل ہوگیا

  

ریاض(مانیٹرنگ ڈیسک)سعودی عرب میں مقیم غیر ملکیوں کے لئے اپنے قانونی حقوق کا عدالتوں کے ذریعے حصول ہمیشہ سے ایک مشکل کام رہا ہے لیکن مملکت میں پہلی بار ایک ایسا شاندار کام ہونے جا رہا ہے کہ جو عدالتوں کا رخ کرنے والے غیر ملکیوں کی زندگی آسان کر دے گا۔ سعودی میڈیا کے مطابق خصوصی لیبر عدالتوں کے قیام کا دیرینہ خواب عنقریب شرمندہ تعبیر ہونے جا رہا ہے، جس کے بعد لیبر مقدمات کے طویل التواءکا سلسلہ ختم ہو جائے گا اور غیر ملکیوں کے لئے اپنے قانونی حقوق کا حصول بہت آسان ہو جائے گا۔

سعودی گزٹ کے مطابق سپریم جوڈیشل کاﺅنسل نئے نظام کی نوک پلک سنوارنے کے آخری مراحل میں ہے۔ لیبر عدالتوں میں تعینات کئے جانے والے 58 جج اس وقت دارالحکومت ریاض میں زیر تربیت ہیں۔ پہلے مرحلے میں سات عدالتیں جدہ، مکہ، مدینہ، بریدا، ابہا ، ریاض اور دمام میں قائم کی جائیں گی۔ لیبر کیسز کو نمٹانے کیلئے مختلف صوبوں اور دیگر علاقوں میں 27 سرکٹ عدالتیں بھی قائم کی جائیں گی۔

وزارت انصاف کے مطابق ماتحت عدالتوں کی جانب سے جاری کئے گئے فیصلوں کی نظر ثانی کیلئے 6اپیلٹ کورٹس بھی قائم کی جائیں گی۔ یہ عدالتیں ملازمت کے معاہدوں، اجرت، حقوق، نقصانات، زرتلافی اور سوشل انشورنس ودیگر معاملات سے متعلقہ مقدمات کو نمٹائیں گی۔ توقع کی جارہی ہے کہ ستمبر سے یہ عدالتیں کام شروع کردیں گی۔

مزید :

عرب دنیا -