الیکشن 2018: ایسا مت کریں، ووٹ خارج ہوسکتا ہے!

الیکشن 2018: ایسا مت کریں، ووٹ خارج ہوسکتا ہے!
الیکشن 2018: ایسا مت کریں، ووٹ خارج ہوسکتا ہے!

  

اسلام آباد(ڈیلی پاکستان آن لائن)الیکشن کمیشن آف پاکستان نے انتخابات 2018 میں ووٹ ڈالنے والوں کے لیے طریقہ کار وضع کرتے ہوئے ووٹ گنتی میں شمار ہونے یا خارج ہونے کی تفصیلات کا اعلان کردیا۔

ڈان نیوز کے مطابق الیکشن کمیشن کے جاری بیان کے مطابق آفیشل کوڈ مارک اور اسسٹنٹ پریزائیڈنگ افسر کے دستخط کے بغیر بیلیٹ پیپر گنتی سے خارج ہوجائے گا۔اس کے علاوہ واٹر مارک والے بیلیٹ پیپر کے علاوہ دوسرا کوئی بیلیٹ پیپر گنتی سے خارج ہو گا جبکہ مخصوص 9 خانوں والی مہر کے علاوہ کوئی دوسری مہر والا بیلیٹ پیپر بھی شمار نہیں ہوگا۔الیکشن کمیشن کے مطابق بیلیٹ پیپر کے ساتھ کوئی کاغذ یا کچھ اور لگانے والا بیلیٹ پیپر بھی گنتی سے خارج تصور ہو گا۔انتخابی عمل کے ذمہ دار ادارے کے مطابق ایک سے زائد امیدواروں کے نشان پر 9 خانوں والی مہر لگائی گئی تو بھی ووٹ خارج تصور ہوگا جبکہ 2 امیدواروں کے خانوں میں برابر کی مہر لگا بیلیٹ پیپر بھی گنتی میں شمار نہیں ہو گا۔الیکشن کمیشن کے مطابق زیادہ سیاہی لگنے والا بیلیٹ پیپر، مہر کا نشان کسی خاص امیدوار کے لیے واضح ہو تو ووٹ گنتی میں شمار ہوگا۔اس کے علاوہ 9 خانوں والی مہر کسی ایک امیدوار کے خانے میں زیادہ اور دوسرے میں کم ہو تو ووٹ گنتی میں شامل ہو گا۔الیکشن کمیشن کے مطابق ایک ہی امیدوار کے نشان پر ایک سے زائد مرتبہ مہر یا ایک ہی امیدوار کے نام اور نشان پر مہر والا بیلیٹ پیپر گنتی میں شمار کیا جائے گا۔-

-

مزید :

قومی -