وزیر اعظم پاکستان کے معاشی استحکام کے وژن میں تعاون کرینگے: عالمی بینک

وزیر اعظم پاکستان کے معاشی استحکام کے وژن میں تعاون کرینگے: عالمی بینک

  



واشنگٹن(اظہر زمان/بیوروچیف) عالمی بینک کے صدر ڈیوڈ مالپس نے کہا کہ پاکستان خطے کا اہم ملک ہے، پاکستان میں عالمی بینک کے تعاون سے کئی منصوبے مکمل ہوئے، نئے پروگرام کے بعد پاکستان معاشی استحکام کی جانب بڑھے گا، بیرونی سرمایہ کاروں کا پاکستان پر اعتماد مزید بڑھے گا، سماجی ترقی اور نوجوانوں کی فلاح وبہبود کے پروگرام قابل ستائش ہیں، عالمی بینک وزیراعظم کے معاشی استحکام وژن میں تعاون کرے گا۔ تفصیلات کے مطابق وزیراعظم عمران خان کی عالمی بینک کے صدر ڈیوڈ مالپس سے ملاقات ہوئی جس کا اعلامیہ جاری کردیا گیا۔عمران خان سے عالمی بینک کے صدر ڈیوڈ مالپس کی ملاقات پاکستانی سفارت خانے میں ہوئی، اس موقع پر وزیر خارجہ، مشیر خزانہ، مشیر تجارت اور وفاقی وزرا کا وفد بھی ملاقات میں موجود رہا۔وزیراعظم کی عالمی بینک کے صدر سے ملاقات سے متعلق جاری اعلامیے میں کہا گیا ہے کہ عمران خان نے ورلڈبینک کے صدر کو ذمہ داریاں سنبھالنے پر مبارکباد دی اور عالمی بینک کے پاکستان سے مختلف شعبہ جات میں تعاون کو سراہا۔اعلامیے کے مطابق وزیراعظم نے صحت، تعلیم اور نوجوانوں سے متعلق حکومتی اقدامات سے آگاہ کیا، وزیراعظم نے کاروبار میں آسانی سے متعلق حکومتی ویژن پر بھی اعتماد میں لیا، اس دوران انہوں نے ورلڈبینک کے پاکستان کے ساتھ تعاون پر اظہار اطمینان کیا۔اس موقع پر عمران خان نے امید ظاہر کی کہ عالمی بینک پاکستان میں جاری منصوبوں کیلئے تعاون جاری رکھے گا، حکومت پاکستان بھی عالمی بینک کے ساتھ مکمل تعاون کرے گی۔دوسری جانب ایک بیان میں عالمی مالیاتی فنڈ (آئی ایم ایف)کے قائم مقام ایم ڈی ڈیوڈ لپٹن نے کہا ہے کہ پاکستان کو مالی امداد کا مقصد وہاں کی معیشت کو مستحکم کرنا اور اداروں کو مضبوط کرنا ہے، آئی ایم ایف ریفارم پروگرام میں پاکستان کی معاونت کر رہا ہے، آئی ایم ایف اپنے عالمی پارٹنرز کے اشتراک سے پاکستان کے ریفارم پروگرام کی معاونت جاری رکھے گا۔ آئی ایم ایف کے قائم مقام ایم ڈی ڈیوڈ لپٹن نے واشنگٹن میں وزیراعظم عمران خان کے ساتھ ملاقات کی۔ڈیوڈ لپٹن نے اپنے بیان میں کہا کہ آئی ایم ایف پروگرام پاکستان کو پائیدار اور متوازن ترقی دیگا۔ڈیوڈ لپٹن نے کہا کہ وزیراعظم پاکستان سے ملاقات میں آمدنی بڑھانے اور قرضوں پر انحصار کم کرنے کی اہمیت کو اجاگر کرنے پر زور دیا۔انہوں نے کہا کہ ٹیکس آمدنی معاشرتی اور ترقیاتی اخراجات کی یقینی فراہمی کیلئے ضروری ہے۔

ورلڈ بینک/آئی ایم ایف

مزید : صفحہ اول


loading...