پاکستان میں جو قانون ہے وہی چلے گا، بادشاہت نہیں،قمر زمان کائرہ

پاکستان میں جو قانون ہے وہی چلے گا، بادشاہت نہیں،قمر زمان کائرہ

  



لاہور( این این آئی)پیپلز پارٹی وسطی پنجاب کے صدر قمرزمان کائرہ نے کہا ہے کہ عمران خان کی جانب سے امریکہ جا کر بھی اپوزیشن کو دھمکیاں دینا افسوسناک ہے،ایسے لگ رہا تھا جیسے اڈیالہ یا کیمپ جیل کا سپرنٹنڈنٹ بول رہا ہو،کہتے ہیںواپس جا کر فلاں کا اے سی اور بیرک بدل دوں گا،بھائی صاحب یہ کام آپ کے نہیں ہیں یہاں جو قانون ہے وہی چلے گا،یہاں بادشاہت نہیں ہے،ہاں آپ کا وطیرہ ضرور بادشاہوں والا ہے،کمزور سہی پاکستان میں جمہوریت ہے کم سہی مگر عدالتیں یہاں انصاف کر رہی ہیں،خان صاحب نے تاریخ کو مسخ کرتے ہوئے کہا کہ سوشلزم نے ایوبی ترقی کو خراب کر دیا ،موصوف کو یہ نہیں معلوم کہ پاکستان کا آج بھی جو قانون ہے وہ سوشل ڈیموکریسی کا قانون ہے،دنیا میں سرمایہ دارانہ نظام میں بھی جو سہولتیں دی گئیں وہ بھی اسی سوشلزم کے خوف کی وجہ سے۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے چودھری منظور احمد، چوہدری اسلم گل ،ملک عثمان ،بیرسٹر عامر حسن ،منور انجم اور دیگر رہنما ﺅں کے ہمراہ 25جولائی کو یوم سیاہ کی تقریب کے حوالے سے مشاورتی اجلاس کے بعد پریس کانفرنس کرتے ہوئے کیا ۔ قمر زمان کائرہ نے کہا کہ خان صاحب ایوب دور میں چند خاندان امیر ہوئے ،ملک ٹوٹا،آپ کے ذہن میں بھی وہی ملک توڑنے والے رویے ہیں، یہ رویے ترک کریں،سارے اداروں کو اس بات پر توجہ دینے کی ضرورت ہے۔انہوں نے کہا کہ 25 جولائی کو مسلم لیگ (ن) اور دیگر اپوزیشن جماعتوں کے ساتھ ملکر مال روڈ پر انتخابی دھاندلی کیخلاف جلسہ کریں گے،جیالے جوش و خروش سے جلسے میں شرکت کریں گے۔انہوں نے کہا کہ وزیراعظم سے قوم کی توقع تھی کہ وہ امریکہ میں قوم کی ترجمانی کریں گے۔ انہوں نے کہا کہ اپوزیشن کو دھرنے اور کنٹینر کی دعوتیں دینے والوں سے چند سو کارکن برداشت نہیں ہوئے،اب جلسے کرنے کی اجازت نہیں دیتے ،ہم زبردستی جلسے کرتے ہیں،یہ مقدمات درج کرتے ہیں،میڈیا پر سنسرشپ ہے ،مریم کی فیصل آباد ریلی کا نشر ہونا دور کی بات ان کے ٹکر نہیں چل سکے،کیا کوئی ذی شعور مان سکتا ہے کہ یہ میڈیا نے خود کیا ہوگا،یہ فاشزم ہے اس کو پاکستان کے لوگ قبول نہیں کریں گے،ڈر ہے حکومت کہیں پاکستان کا اتنا نقصان نہ کر دے جس کا ازالہ ممکن نہ رہے۔

قمرزمان کائرہ

مزید : علاقائی