یو ایس ایف نے سماجی ترقی کے متعدد منصوبے شروع کئے‘ خالدمقبول صدیقی

یو ایس ایف نے سماجی ترقی کے متعدد منصوبے شروع کئے‘ خالدمقبول صدیقی

  



لاہور(پ ر) یونیورسل سروس فنڈ (یو ایس ایف) نے بلوچستان اور سندھ میں منصوبوں کے لئے 1.328 بلین روپے مالیت کے کنٹرکٹس ٹیلی نار پاکستان کو دے دیے ہیں۔ وفاقی وزیر برائے انفارمیشن ٹیکنالوجی و ٹیلی کام خالد مقبول صدیقی نے پیر کو منعقدہ ایک تقریب میں نیشنل ہائی ویز اور موٹر ویز (بلوچستان) پر براڈ بینڈ کوریج، دادو اور حیدر آباد میں پائیدار ترقیاتی منصوبوں کے لئے نیکسٹ جنریشن براڈ بینڈ کے منصوبوں کا افتتاح کیا۔ یونیورسل سروس فنڈ کے چیف ایگزیکٹو آفیسر رضوان مصطفیٰ میر اور ٹیلی نار پاکستان کے سی ای او و ٹیلی نار کے ایمرجنگ ایشیا کلسٹر کے سربراہ عرفان وہاب خان نے معاہدوں پر دستخط کئے۔ تقریب کے مہمان خصوصی ڈاکٹر خالد مقبول صدیقی نے اس موقع پر خطاب کرتے ہوئے کہا کہ یو ایس ایف نے پاکستان کے پسماندہ علاقوں میں رہنے والے عوام کے سماجی و اقتصادی فائدہ کے لئے متعدد منصوبے شروع کئے ہیں۔ ان منصوبوں کو مزید آگے بڑھاتے ہوئے وزارت انفارمیشن ٹیکنالوجی ایک جدید نظریہ رکھتی ہے تاکہ پاکستانی عوام ان منصوبوں سے مزید فوائدحاصل کر سکیں۔ انہوں نے مزید کہا کہ وزارت انفارمیشن ٹیکنالوجی و ٹیلی کام دیہی علاقوں میں عوام کی سہولت کے لئے ملک بھر میں براڈ بینڈ کی فراہمی کے مشن کو حاصل کرنے کے لئے اپنا کام جاری رکھے گی۔ انہوں نے کہا کہ یہ منصوبے عوام کے لئے نئی راہیں کھولیں گے اور انہیں ای کامرس اور دیگر خدمات کی میزبانی فراہم کریں گے جس کا وہ چند سال پہلے سوچ بھی نہیں سکتے تھے۔ انہوں نے اس اقدام پر یو ایس ایف اور ٹیلی نار کا شکریہ ادا کیا۔ اس موقع پر رضوان میر، سی ای او، یو ایس ایف نے کہا کہ بلوچستان اور سندھ میں ان معاہدوں سے یونیورسل سروس فنڈ نے پسماندہ اور محروم علاقوں میں تیز رفتار براڈ بینڈ خدمات کی فراہمی کے لئے ایک اور قدم اٹھایا ہے۔ انہوں نے بتایا کہ براڈ بینڈ کوریج N25 (اتھل۔ کوئٹہ) اور N65 (کوئٹہ۔ ڈیرہ اللہ یار) سڑک کے 650 کلو میٹر علاقے میں جبکہ N50 (کچلاک اور شیرانی) اور N70 (قلعہ سیف اللہ سے رخنی) سڑک کے 451 کلو میٹر کے علاقے میں فراہم کی جائے گی۔

اس کے علاوہ 1.2 ملین آبادی پر مشتمل دادو کے 481 موضع جات اور حیدر آباد میں 2.6 ملین آبادی پر مشتمل 964 موضع جات میں موبائل براڈ بینڈ کوریج فراہم کی جائے گی۔

مزید : کامرس


loading...