شکایات کے ازالے کے لئے سندھ سیکریٹریٹ میں کمپلینٹ سیل قائم

شکایات کے ازالے کے لئے سندھ سیکریٹریٹ میں کمپلینٹ سیل قائم

  



کراچی(اسٹاف رپورٹر) سندھ حکومت نے عوام کے شکایات کے ازالے کے لئے سندھ سیکریٹریٹ میں کمپلینٹ سیل بنایا ہے۔ پیر کے روز چیف سیکریٹری سندھ سید ممتاز علی شاہ نے کمپلینٹ سیل کا افتتاح کیا۔ سندھ سیکریٹریٹ میں منعقد کمپلینٹ سیل کی افتتاحی تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ عوام کے شکایات کم وقت میں حل کرنے کے لئے آج کمپلینٹ سیل بنایا ہے۔ انہوں نے کہا کہ وزیر اعظم سیکریٹریٹ اور وزیر اعلیٰ سیکریٹریٹ میں بھی کمپلینٹ سیل بنائے گئے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ چیف سیکریٹری کمپلینٹ سیل سے بھی عوام کی شکایات پر فوری عمل درآمد ہوگا۔ انہوں نے کہا کہ سندھ حکومت نے ایک ایسا نظام قائم کیا ہے جس سے اب عوام کی شکایات کے ازالے کے لئے حکومت بروقت کاروائی کرے گی۔ انہوں نے کہا کہ شکایات کے ازالے کے لئے تمام محکموں کے متعلقہ افسران کو ہدایات جاری کردی گئی ہے۔ ممتاز علی شاہ نے کہا کہ افسران کی کارکردگی بھی اب شکایات کے ازالے پر انحصار کرتی یے۔ انہوں نے کہا کہ اب افسران کی سالانہ کانفیڈنشل رپورٹ اور سالانہ ایولیئیشن رپورٹ بھی کمپلینٹ سیل میں پرفارمنس دیکھ کر بھری جائے گی۔ انہوں نے کہا کہ وہ اس کمپلینٹ سیل وک خود مانیٹر کریں گے اور 15 روز میں کمپلینٹ کو حل کیا جائے گا اور اس سلسلے میں ہر ماہ جائزہ اجلاس کیا جائے گا۔ نیب کی کارروائیوں سے متعلق ایک سوال کے جواب میں انہوں نے کہا کہ یہ تاثر غلط ہے کے افسران میں نیب کا پریشر, انہوں نے کہا کہ تمام ادارے اپنی آئینی حدود میں رہ کر کام کر رہے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ چیئرمین نیب نے بھی افسران کو یقین دہانی کروائی ہے کے کسی کے ساتھ نا انصافی نہیں کی جائے گی۔ تقریب میں چیف سیکریٹری کمپلینٹ سیل کے انچارج امیر فضل گھمرو نے بتایا کے درخواستیں موصول ہونے کے بعد ایک کمپیوٹرائزڈ نظام کے تحت انکو حل کیا جائے گا۔ درخواست گزاروں کے لئے گائیڈ لائن بھی دی گئی ہے جس کے تحت وہ درخواست جمع کرواسکتے ہیں اور اس لئے سیکریٹریٹ کے داخلی دروازوں پر کمپلینٹ باکس لگائے گئے ہیں اور تمام شکایتوں کو اسکریننگ اور اسکیننگ کے مراحل سے گزار کر متعلقہ افسران کو ارسال کی جائے گی جہاں سے 15 روز کے اندر عملدرآمد کی رپورٹ دی جائے گی اور درخواست گزار کو ایس ایم ایس کے ذریعے ایک ٹریکنگ نمبر بھی دیا جائے گا۔ یاد رہی چیف سیکریٹری کمپلینٹ سیل میں نوکریوں کی درخواستیں قبول نہیں کی جائے گی اور نا ہی ایسی درخواستیں جو پہلے سے کسی عدالت یاں اداری میں انکوائری کے مراحل میں ہو وہ بھی قبول نہیں کی جائے گی۔

مزید : راولپنڈی صفحہ آخر


loading...